ہندو قوم پرستی کی وجہ سے ہند-چین کے درمیان ہو سکتی ہے جنگ: چینی میڈیا

Jul 20, 2017 01:00 PM IST | Updated on: Jul 20, 2017 01:00 PM IST

نئی دہلی۔ ہندوستان اور چین کے درمیان بھوٹان کے ڈوكلام کو لے کر کشیدگی جاری ہے۔ ایک ماہ سے زیادہ وقت سے ہندوستانی فوج ڈوكلام میں تعینات ہے اور چین مسلسل ہندوستان کو جنگ کی دھمکی دے رہا ہے۔ چین کے سرکاری اخبار گلوبل ٹائمز نے اپنے اداریے میں لکھا ہے کہ ہندوستان مسلسل چین کو اکسا رہا ہے اور اس کے ساتھ ہی ہندوستان میں قوم پرستی کے نام پر چین مخالف جذبات بھڑکائے جا رہے ہیں۔

چینی میڈیا نے لکھا کہ ہندوستان چین کے خلاف اسٹریٹجک طریقے سے عدم اعتماد پیدا کر رہا ہے۔ یہ چین کو اپنا مخالف اور دشمن سمجھتا ہے۔ طویل عرصہ سے ہندوستان یہ پروپیگنڈہ کرنے کی کوشش کر رہا ہے کہ چین ہندوستان کو گھیر رہا ہے۔ چینی اخبار نے لکھا کہ چین نے ہندوستان کو ون بیلٹ ون روڈ میں شامل ہونے کی دعوت دی تھی جس کے ہندوستان نے غلط معنی نکالے۔ گلوبل ٹائمز نے لکھا ہے کہ چین کی ترقی کو ہندوستان خطرے کے طور پر دیکھتا ہے۔

ہندو قوم پرستی کی وجہ سے ہند-چین کے درمیان ہو سکتی ہے جنگ: چینی میڈیا

چینی اخبار نے لکھا کہ ہندوستان میں ایک خاص طرح کی قوم پرستی تیزی سے بڑھ رہی ہے۔ اس میں لکھا ہے، "نریندر مودی کے وزیر اعظم کے طور پر منتخب ہونے کے بعد ہندوستان میں قوم پرستی کو تقویت ملی۔ مودی نے اقتدار میں آنے کے لئے ہندو قوم پرستی کا فائدہ اٹھایا۔ اس نے ایک طرف تو ملک میں ان کا احترام بڑھانے اور ملک پر کنٹرول حاصل کرنے میں ان کی مدد کی وہیں دوسری طرف اس کے چلتے ہندوستان میں قدامت پسندوں کا اثر بڑھا ہے۔ سفارتی طور پر نئی دہلی پر بیرون ملک سے تعلقات، خاص طور پر چین اور پاکستان پر سختی سے پیش آنے کا دباؤ ہے۔ اس بار چین کے ساتھ سرحدی تنازعہ ہندوستان کے مذہبی قوم پرستی کے مطالبہ کی تکمیل کے لئے ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز