کانگو میں جیل پر حملے میں 11 افراد ہلاک، سینکڑوں فرار

Jun 12, 2017 01:43 PM IST | Updated on: Jun 12, 2017 01:43 PM IST

کنشاسا۔  ڈیموکریٹک جمہوریہ کانگو کے شمال مشرقی شہر بینی میں کل ایک جیل پر کچھ نا معلوم حملہ آوروں نے حملہ کر دیا جس میں کم از کم 11 لوگوں کی موت ہو گئی جبکہ 930 سے ​​زائد قیدی یہاں سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے ۔ صوبائی حکومت نے ایک بیان میں اس حملے کی تصدیق کی ہے۔ یہ گزشتہ چند دنوں میں کانگو میں جیلوں پر کیا گیا چوتھا حملہ ہے۔ قابل ذکر ہے کہ صدر جوزف کبیلا کے اپناعہدہ چھوڑنے سے انکار کے بعد سے یہاں عدم تحفظ کسی قدر بڑھ گیا ہے۔ شمالی كوو صوبے کے گورنر جوليين پلك نے ایک بیان میں بتایا کہ حملہ آوروں نے حملے میں بھاری ہتھیاروں کا استعمال کیا تھا اورجیل کے تقریباً آٹھ گارڈوں کو قتل کر دیا۔

انہوں نے کہا، ’’فرار قیدیوں کی تلاش میں فوج اور پولیس اہلکار جٹ گئے ہیں۔ اس وقت تقریباً 30 قیدی جیل میں ہیں اور بینی اور آس پاس کے علاقوں میں کرفیو لگا دیا گیا ہے۔‘‘ مسٹر پلك نے بتایا کہ ابھی تک یہ واضح نہیں ہے۔ حملے کے پیچھے کون ذمہ دار ہے لیکن بینی میں بہت سے خود ساختہ گروہ سرگرم ہیں۔ قابل ذکر ہے کہ گزشتہ ماہ دارالحکومت کنشاسا کی ہائی سیکورٹی والی جیل پر حملے میں تقریباً چار ہزار قیدی فرار ہونے میں کامیاب رہے تھے۔

کانگو میں جیل پر حملے میں 11 افراد ہلاک، سینکڑوں فرار

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز