کشمیرمیں آرٹیکل 370 ہٹنے کےبعد بوکھلا گئے شعیب اختر

پاکستان کے تیز گیند بازشعیب اخترنے بھی کشمیرمیں آرٹیکل 370 ہٹنے پراپنا ردعمل ظاہر کیا، جس پرہندوستانی مداح انہیں مسلسل ٹرول کررہے ہیں۔

Aug 13, 2019 10:21 PM IST | Updated on: Aug 13, 2019 10:21 PM IST
کشمیرمیں آرٹیکل 370 ہٹنے کےبعد بوکھلا گئے شعیب اختر

کشمیرمیں آرٹیکل 370 ہٹنےکے بعد بوکھلا گئے شعیب اختر۔

پاکستان کے تیز گیند بازشعیب اختریوٹیوب ویڈیو میں اکثرچھائے رہتے ہیں۔ کرکٹ کولے کر ان کی سوچ اوران کی باتیں مداحوں کو کافی پسند آتی ہیں، لیکن اب انہوں نے ایک ایسی بات کہہ دی ہے، جس کے بعد سوشل میڈیا پران کی مخالفت ہورہی ہے۔ دراصل شعیب اخترنے کشمیرمیں آرٹیکل 370 ہٹنے پراپنا ردعمل ظاہرکیا ہے۔ شعیب اخترنے اپنے ٹوئٹراکاونٹ پر ایک تصویرپوسٹ کی ہے، جس پرکافی تنازعہ ہورہا ہے۔

شعیب اخترکا متنازعہ ٹوئٹ

Loading...

شعیب اخترنے ایک بچے کی تصویرٹوئٹ کی، جس کی آنکھ پرچوٹ ہےاوراس پرپٹی بندھی ہوئی ہے۔ شعیب اخترنے اس پرکیپشن دیا 'ہم آپ کی طرف سےکھڑے ہیں... عید مبارک'۔ اس کےعلاوہ تصویرپرلکھا ہوا ہے، 'آپ قربانی کی وضاحت کرتے ہیں اورجینے کےلئےکیا مقصد ہے'۔ اس کے ساتھ انہوں نےاس پوسٹ 'ہیش ٹیگ کشمیر' لگایا ہے۔

شعیب اخترکا ٹوئٹ۔ شعیب اخترکا ٹوئٹ۔

سرفراز، آفریدی بھی دے چکے ہیں متنازعہ بیان

شعیب اخترسے قبل پاکستان کے کپتان سرفرازاحمد اورسابق کپتان شاہد آفریدی بھی کشمیرکے موضوع پرمتنازعہ بیان دے چکے ہیں۔ سرفرازاحمد نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا 'میں اللہ سے دعا کرتا ہوں کہ وہ اس مشکل وقت میں ہمارے کشمیری بھائیوں کی مدد کریں۔ ہم ان کی تکلیف سمجھتےاورمحسوس کرتے ہیں۔ پورا پاکستان ان کے ساتھ کھڑا ہے۔ شاہد آفریدی نےتواقوام متحدہ کے سامنے اس موضوع کواٹھائے جانے کا مطالبہ کیا تھا اوراس معاملے پرخاموشی اختیارکرنے پراقوام متحدہ کو کھری کھوٹی سنائی۔ ساتھ ہی انہوں نےاس معاملے میں امریکہ سے ثالثی کا بھی مطالبہ کیا۔

سرفرازاحمد اورشاہد آفریدی۔ سرفرازاحمد اورشاہد آفریدی۔

واضح رہے کہ مودی حکومت کے آرٹیکل 370 ختم کرنےاورجموں وکشمیراورلداخ کو مرکزکے زیرانتظام ریاست اعلان کرنے کے بعد سے پاکستان بری طرح بوکھلایا گیا ہے۔ نریندرمودی حکومت کے اس تاریخی فیصلے کے بعد جموں وکشمیر کوملی خصوصی درجہ ختم ہوگیا ہے۔ ہندوستان میں جہاں اس فیصلے کا جشن منایا جارہا ہے۔ وہیں سرحد پارپاکستان میں جیسے اسےلےکرتمام جیسے حالات ہوگئے ہیں۔

Loading...