وادی کشمیر میں تین سالہ کمسن بچی کی عصمت دری پر شدید غم و غصہ– News18 Urdu

وادی کشمیر میں تین سالہ کمسن بچی کی عصمت دری پر شدید غم و غصہ

ریاستی پولیس نے ملزم کو حراست میں لیکر کیس کی تحقیقات کے لئے ایک خصوصی تحقیقاتی ٹیم تشکیل دی ہے جو ایس ڈی پی او سمبل، ایس ایچ او سمبل اور دیگر کچھ سینئر پولیس افسران پر مشتمل ہے۔

May 13, 2019 10:26 AM IST | Updated on: May 13, 2019 10:26 AM IST

شمالی کشمیر کے ضلع بانڈی پورہ کے ملک پورہ ترہگام سمبل میں 8 مئی کو پیش آئے دل دہلانے والے تین سالہ کمسن بچی کی عصمت دری کے واقعہ نے وادی کشمیر میں شدید غم وغصے کی لہر پیدا کردی ہے۔ ریاستی پولیس نے ملزم کو حراست میں لیکر کیس کی تحقیقات کے لئے ایک خصوصی تحقیقاتی ٹیم تشکیل دی ہے جو ایس ڈی پی او سمبل، ایس ایچ او سمبل اور دیگر کچھ سینئر پولیس افسران پر مشتمل ہے۔ ایس ایس پی بانڈی پورہ راہل ملک نے لوگوں سے صبر و تحمل کا مظاہرہ کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملزم کی اصل عمر کا پتہ لگانے کے لئے سائنسی طریقہ کار استعمال کیا جائے گا اور اس کے لئے ڈاکٹروں کی ایک ٹیم تشکیل دی جائے گی۔

ضلع مجسٹریٹ بانڈی پورہ شہباز احمد مرزا نے بھی لوگوں سے صبر کا دامن تھامنے اور افواہوں پر کان نہ دھرنے کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا 'کمسن بچی کی آبرو ریزی کے واقعہ کی تحقیقات جاری ہے۔ ہم یقین دلانا چاہتے ہیں کہ ملزمین کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔ ہم لوگوں سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ امن کا دامن تھامے رکھیں اور افواہوں پر توجہ نہ دیں'۔ لوگوں کا الزام ہے کہ ملزم طاہر احمد میر جو ملک پورہ ترہگام کا ہی رہنے والا ہے، کو 'نابالغ' قرار دیکر بچانے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔ رپورٹوں کے مطابق ملزم کی عمر 20 برس ہے۔

وادی کشمیر میں تین سالہ کمسن بچی کی عصمت دری پر شدید غم و غصہ

وادی میں کشیدگی

ملزم کو فوری اور قرار واقعی سزا دینے کے مطالبے کو لیکر وادی کے متعدد علاقوں بشمول سمبل، خمینی چوک، ماگام، بڈگام، سری نگر اور بارہمولہ میں اتوار کے روز شدید احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔ بالخصوص خمینی چوک اور ماگام میں مظاہرین کی سیکورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپیں بھی ہوئیں جن میں متعدد افراد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔

کشمیر انتظامیہ نے احتیاط کے طور پر وادی کے کچھ اضلاع بشمول بڈگام، بانڈی پورہ اور بارہمولہ میں موبائیل انٹرنیٹ خدمات منقطع کرادی ہیں۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ موبائیل انٹرنیٹ خدمات کی معطلی کا اقدام کسی بھی طرح کی افواہ بازی کو روکنے کے لئے اٹھایا گیا ہے۔ وہیں، وادی کشمیر میں علاحدگی پسند لیڈر شپ نے واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے ملزم کو سخت سے سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ جموں و کشمیر اتحاد المسلمین نے فاسٹ ٹریک بنیاد پر انصاف کا مطالبہ کرتے ہوئے 13 مئی پیر کے روز 'کشمیر بند' کی کال دی اور ملزم کو کیفردار تک پہنچانے کے لئے پرامن احتجاج کی اپیل کی ہے۔

Loading...

Loading...