روم ائیر پورٹ پر مسلم خاتون کے ساتھ بدسلوکی ، میڈم جی حجاب اتار لیجئے، آپ ہمارے لئے محفوظ نہیں ہیں

Apr 16, 2017 01:18 PM IST | Updated on: Apr 16, 2017 03:55 PM IST

روم: اٹلی کے دارالحکومت روم کے ہوائی اڈے پر موبائل سے بنائی گئی ایک ویڈیو آج کل سوشل میڈیا پر موضوع بحث بنا ہوا ہے۔ ویڈیو میں ایئر پورٹ پر موجود سیکورٹی اہلکار ایک مسلم خاتون پر حجاب اتارنے کے لئے دباؤ بنا رہے ہیں۔ فاسٹر ناویٹس کے فیس بک کے پیج سے پوسٹ کئے گئے اس ویڈیو میں مسلم خاون مسافر بار بار سکیورٹی اہلکاروں سے کہہ رہی ہے کہ حجاب اتروابا قانون نہیں ہے، لہذا اس پر ایسا کرنے کے لئے دباؤ بنانا صحیح نہیں ہے، جس کے بعد جواب میں ایک خاتون سیکورٹی اہلکار مسلم خاتون سے کہتی ہے کہ 'آپ محفوظ نہیں ہیں، جب تک حجاب اتار کر آپ اپنی اجانچ نہیں کروا لیتیں، حجاب نہ اتارنا آپ کے لئے اور ہمارے لئے بھی محفوظ نہیں ہے۔ آپ سیکورٹی چیکنگ کے پیش نظر حجاب اتار دیں۔ خاتون سیکورٹی اہلکار کہتی ہے کہ تم نے اپنے سر کے بالوں میں کوئی چیز چھپا رکھی ہے، اس لئے حجاب اتارکر جانچ ضروری ہے۔

اس کے بعد مسلم خاتون سیکورٹی اہلکار سے کہتی ہے کہ آپ کو مسلم خواتین اور ان کا حجاب پہننا اچھا نہیں لگتا، آپ کو ہمارے اس حجاب پر اعتراض ہے، لیکن کیا آپ بتائیں گی کہ راہبہ بھی اسکارف پہنتی ہیں، اس کے بعد بھی آپ انہیں آسانی سے راستہ کیوں دے دیتی ہیں؟ میں آپ کو ثابت کر سکتی ہوں کہ میں دہشت گرد نہیں ہوں، ساتھ ہی میرے پاس کوئی خطرناک سامان ہے، اس بات کو لے کر دونوں میں کافی دیر تک بحث ہوتی ہے۔

روم ائیر پورٹ پر مسلم خاتون کے ساتھ بدسلوکی ، میڈم جی حجاب اتار لیجئے، آپ ہمارے لئے محفوظ نہیں ہیں

این ڈی ٹی وی ڈاٹ کام نے ڈیلی میل کی خبر کے حوالہ سے بتایا ہے کہ روم ایئر پورٹ پر روکی گئی مسلم خاتون کا نام اگھنيا ازکيہ ہے اور وہ بنیادی طور پر انڈونیشيا کی رہنی والی ہے اور وہ اٹلی سمیت یورپ کی سیر پر نکلی تھیں۔ پوسٹ کے مطابق ایئر پورٹ پر ہوئے اس واقعہ کے بعد مسلم خاتون نے فلائٹ چھوڑ دی،مگر جب وہ دوسری مرتبہ پھر فلائٹ پکڑنے گئی، تو اس کے ساتھ سکیورٹی اہلکاروں نے پھر ویسا ہی سلوک کیا، جس کے بعد اس نے مجبوری میں حجاب ہٹا کر اپنی چیکنگ کرا لی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز