عدالت نے کتے کو سنائی سزائے موت ، پھر کیا بری

پ نے موت کی سزا پانے والے کسی شخص کے بری ہونے کی خبر تو سنی ہوگی ، لیکن ایک عجیب و غریب معاملہ میں امریکہ کے مشی گن صوبے کی ایک عدالت نے ایک کتے کو دوسرے کتے کے قتل کے لئے موت کی سزا سنائی

Nov 03, 2016 05:46 PM IST | Updated on: Nov 03, 2016 05:46 PM IST

نیویارک : آپ نے موت کی سزا پانے والے کسی شخص کے بری ہونے کی خبر تو سنی ہوگی ، لیکن ایک عجیب و غریب معاملہ میں امریکہ کے مشی گن صوبے کی ایک عدالت نے ایک کتے کو دوسرے کتے کے قتل کے لئے موت کی سزا سنائی ، لیکن بعد میں مارے گئے کتے پر ملے خون سے اس کے ڈی این اے کے نہیں ملنے پر اسے بری کر دیا۔

یہ معاملہ مشی گن صوبے کا ہے ، جہاں 'جیب نام کے کتے پر پڑوس کے گھر میں رہنے والے 'ولاڈ نام کے کتے کے قتل کا الزام لگا ، لیکن کئی ہفتوں تک موت کی سزا پر رہنے کے بعد وہ بری ہو کر اپنے مالک کے پاس واپس لوٹ آیا۔

عدالت نے کتے کو سنائی سزائے موت ، پھر کیا بری

file photo

بیلجیائی ملینوس نسل کے اپنے کتے کو واپس پا کر کینتھ جاب کافی جذباتی ہو گئے اور اسے دیکھ کر انہوں نے کہا کہ جیب کی جلد کافی بھدی نظر آرہی ہے لیکن وہ زندہ ہے۔ جاب نے 'ٹائمز ہیرالڈ سے کہا کہ مجھے بولنے کے لئے مت کہو کیونکہ میں رونے لگوں گا۔ مشی گن کے ڈیٹروئٹ شہر سے 50 میل دور شمال مشرق میں سینٹ کلیئر ٹاؤن شپ میں 24 اگست کو ولاڈ کی لاش ملی اور جیب کو اس کی لاش کے پاس کھڑا دیکھا گیا۔ انتظامیہ نے بتایا کہ پومیرانین نسل کے مردہ کتے کی چوٹوں سے اشارہ ملا کہ اسے کسی بڑے جانور نے مارا ہے۔

عدالت نے اس کے لئے جیب کو موت کی سزا سنائی لیکن ساتھ ہی مارے گئے کتے کی لاش پر ملے خون سے اس کا ڈی این اے ٹیسٹ کرانے کو بھی منظوری دے دی لیکن ڈی این اے ٹیسٹ میں جیببے قصور ثابت ہوا ، تو اسے بری کر دیا گیا۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز