ڈونالڈ ٹرمپ کا اقوام متحدہ میں خطاب ، کہا : شمالی کوریا کو تباہ کرنا ہوگا ، ایران پر بھی سادھا جم کر نشانہ

امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے بہترویں سالانہ اجلاس میں اپنی تقریر میں شمالی کوریا اور ایرا ن پر کڑی نکتہ چینی کی ہے ۔انھوں نے کہا کہ اگر ہمیں اپنا دفاع کرنا ہے تو پھر شمالی کوریا کو مکمل طور پر تباہ کرنا ہوگا۔

Sep 19, 2017 10:04 PM IST | Updated on: Sep 19, 2017 10:04 PM IST

نیویارک : امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے بہترویں سالانہ اجلاس میں اپنی تقریر میں شمالی کوریا اور ایرا ن پر کڑی نکتہ چینی کی ہے ۔انھوں نے کہا کہ اگر ہمیں اپنا دفاع کرنا ہے تو پھر شمالی کوریا کو مکمل طور پر تباہ کرنا ہوگا۔ صدر ٹرمپ نے کہا کہ ایرانی حکومت اقتصادی طور پر تھکی ہوئی ایک بھوت ریاست ہے جس کی سب سے بڑی برآمد تشدد ہے ۔ انھوں نے ایران کو اس کے تخریبی کردار پر کڑی تنقید کا نشانہ بنایا اور ایرانی رجیم کو قاتل قرار دیا ہے۔

امریکی صدر ٹرمپ نے یوکرائنی صورت حال، شمالی کوریائی جوہری ہتھیار سازی اور بحیرہ جنوبی چین کے تنازعے کو سلامتی کے لیے خطرہ قرار دیا ہے۔ اس تقریر میں انہوں نے کہا کہ شمالی کوریا کے لیڈر اپنے خودکش مشن پر روانہ ہیں اور اقوام عالم کے لیے اس ملک کے خلاف مشترکہ حکمت عملی اپنانا از حد ضروری ہے۔ ٹرمپ نے کم جونگ اُن کو استہزائیہ انداز میں ’راکٹ مین‘ بھی کہا۔

ڈونالڈ ٹرمپ کا اقوام متحدہ میں خطاب ، کہا : شمالی کوریا کو تباہ کرنا ہوگا ، ایران پر بھی سادھا جم کر نشانہ

صدر ٹرمپ نے اپنی تقریر میں ایک نئے ورلڈ آرڈر کا ویژن پیش کیا ،جو کثیر الجہت اتحادوں کے بجائے مضبوط خود مختار قوموں پر مبنی ہوگا۔انہوں نے کہا کہ عالمی ورلڈ آرڈر کو اب اتحادوں کے ساتھ تعین کرنا ضروری نہیں بلکہ یہ ذمہ داری بااختیار حکومت کی بنیاد پر طے ہونی چاہیے۔ انھوں نے کہا کہ جب تک میں امریکہ کا صدر ہوں ،میں امریکہ کے مفادات کا دفاع کروں گا لیکن اپنی اقوام کے لیے ذمے داریوں کا ادراک کرتے ہوئے ہمیں ایک ایسے مستقبل کے لیے جدوجہد کرنی چاہیے جہاں تمام قومیں خود مختار ، خوش حال اور محفوظ ہوں ۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز