کولکاتہ کے کالج میں لگے کشمیر-منی پور کی 'آزادی' کے متنازع نعرے

Apr 03, 2017 08:19 AM IST | Updated on: Apr 03, 2017 08:19 AM IST

کولکاتہ۔ جے این یو اور جادو پور یونیورسٹی کے بعد اب کولکتہ واقع اکیڈمی آف فائن آف آرٹس میں آزادی کے نعرے لگے ہیں۔ طلبہ نے اتوار کو اکیڈمی میں منعقد ایک سیمینار کی مخالفت میں کشمیر، منی پور اور ناگالینڈ جیسی ہندوستانی ریاستوں کی 'آزادی' کے نعرے لگائے۔ یہ سیمینار آر ایس ایس کی جانب سے منعقد کیا گیا تھا۔ واقعہ کا ایک ویڈیو بھی سامنے آیا ہے۔

ویڈیو میں دکھائی دے رہا ہے کہ طالب علم اکیڈمی آف فائن آرٹس کے باہر آر ایس ایس کی طرف سے منعقد سیمینار کے خلاف احتجاج کر رہے تھے۔ آر ایس ایس نے بنگلہ دیش میں اقلیتی ہندو، بدھ مت اور عیسائیوں پر بڑھ رہے حملوں پر بحث کرنے کے لئے سمینار کا انعقاد کیا تھا۔

کولکاتہ کے کالج میں لگے کشمیر-منی پور کی 'آزادی' کے متنازع نعرے

بتا دیں کہ فروری 2016 میں دہلی کی جواہر لال نہرو یونیورسٹی میں بھی اسی طرح کے متنازعہ نعرے لگائے جانے کا معاملہ سامنے آیا تھا۔ اس کے بعد جم کر ہنگامہ ہوا اور دہلی پولیس نے ایکشن لیتے ہوئے اس وقت کے جے این یو ایس یو صدر کنہیا کمار اور دو دیگر طالب علم عمر خالد اور انربان کو گرفتار کر لیا تھا۔ اگرچہ اس معاملے میں بھی دہلی پولیس نے ابھی تک چارج شیٹ فائل نہیں کی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز