شرد یادو کے دورے سے خوفزدہ بہار حکومت نے طوفان کا جھوٹا الرٹ جاری کرایا: فاطمی

Aug 12, 2017 03:10 PM IST | Updated on: Aug 12, 2017 03:10 PM IST

دربھنگہ۔  سابق مرکزی وزیر اور راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے سینئر لیڈر علی اشرف فاطمی نے آج الزام لگایا کہ جنتا دل یونائٹیڈ (جے ڈی یو) کے رہنما اور پارٹی کے سابق قومی صدر شرد یادو کے بہار دورے سے سہمی ہوئی ریاستی حکومت نے ایک سوچی سمجھی سازش کے تحت  محکمہ موسمیات سے طوفان کا جھوٹا الرٹ جاری کروایا تاکہ لوگ ان کے پروگرام میں نہیں پہنچ سکیں۔ مسٹر علی اشرف فاطمی نے آج یہاں پریس کانفرنس میں کہا کہ جے ڈی یو کے سینئر لیڈر شرد یادو کے بہار دورے سے ریاستی حکومت بری طرح گھبرا گئی ہے۔ اس گھبراہٹ میں محکمہ موسمیات سے ریاست میں تیز طوفان آنے کا الرٹ جاری کروا دیا گیا تاکہ لوگوں کو روکا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ پہلے مرکزی تفتیشی بیورو ( سی بی آئی)، پھر انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ ، محکمہ انکم ٹیکس کا استعمال کرنے کے بعد اب محکمہ موسمیات کا غلط استعمال کر کے جان بوجھ کر جھوٹی اور گمراہ کن خبریں پھیلائی گئیں کہ بہار میں دو دنوں تک تیز طوفان اور بھاری بارش ہوگی۔

آر جے ڈی لیڈر نے کہا کہ تمام انتباہات کے باوجود ایسا کچھ نہیں ہوا۔ انہوں نے پورے معاملے میں بہار حکومت اور مرکزی حکومت کی ملی بھگت کا الزام لگاتے ہوئے اس کی جانچ کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے محکمہ موسمیات کے ذریعے یہ ڈر پھیلایا تاکہ لوگوں کو گھبراہٹ میں ڈال کر انہیں شرد یادو کے پروگرام میں جانے سے روکا جائے۔ انہوں نے الزام کو صحیح ثابت کرتے ہوئے کہا کہ شرد یادو کا بہار میں جہاں جہاں دورہ تھا، محکمہ موسمیات نے ان اضلاع کو سب سے زیادہ طوفان اور شدید بارشوں کی افواہ پھیلائی ۔ انہوں نے سوالیہ لہجے میں کہا کہ یہ کس طرح ہو سکتا ہے کہ بھاگلپور سے طوفان براہ راست مظفر پور پہنچ جائے اور درمیان کے اضلاع میں کچھ نہ ہو اور جہاں جہاں شردجي کا پروگرام ہو طوفان آگے آگے انہی علاقے میں جائے۔

شرد یادو کے دورے سے خوفزدہ بہار حکومت نے طوفان کا جھوٹا الرٹ جاری کرایا: فاطمی

سینئر آر جے ڈی لیڈر علی اشرف فاطمی: فائل فوٹو

مسٹر فاطمی نے ملک میں مسلمانوں کی حالت پر رخصت پذیر نائب صدر حامد انصاری کے بیان کو درست ٹھہراتے ہوئے کہا کہ انہوں نے کوئی غلط بات نہیں کی۔ اس طرح کی باتیں سابق صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی نے بھی کہی تھیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ حقیقت ہے کہ ملک میں جانور کے نام پر انسان کو مارا جا رہا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز