بی جے پی اور آر ایس ایس راہل اور میرے خاندان کو نشانہ بنا رہی ہے: لالو پرساد یادو

Aug 08, 2017 08:28 PM IST | Updated on: Aug 08, 2017 08:28 PM IST

پٹنہ۔  راشٹریہ جنتا دل کے صدر لالو پرساد یادو نے بی جے پی اور آر ایس ایس پر کانگریس کے قومی نائب صدر راہل گاندھی کے قتل کی سازش تیار کرنے کا الزام لگاتے ہوئے آج کہا کہ وہ اور ان کا خاندان بھی ان کے نشانے پر ہے۔ مسٹر یادو نے آر جے ڈی لیجس لیچر پارٹی کے لیڈر اور سابق نائب وزیر اعلی تیجسوی پرساد یادو اور سابق وزیر تیج پرتاپ یادو کو جن آدیش یاترا پر روانہ کرنے کے بعد نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی کے اقتدار میں آنے کے بعد سے ملک میں غیر اعلانیہ طورپر ایمرجنسی لگادی گئی ہے۔ انہوں نے خدشہ ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس کے نائب صدر مسٹر گاندھی کے ساتھ ہی ان کے اور ان کے خاندان کو بھی ٹارگیٹ کیا گیا ہے۔

آر جے ڈی صدر نے کہا کہ بی جے پی اور آر ایس ایس نے اپنے تمام مخالفین کو نشانہ بنارکھا ہے اور ایک ایک کرکے سب کو اپنے راستے سے ہٹانا چاہتی ہے۔ وزیر اعلی نتیش کمار کو انہوں نے پلٹو رام اور آستین کا سانپ قرار دیتے ہوئے کہا کہ مہاگٹھ بندھن کی حکومت میں بی جے پی کی دال نہیں گل رہی تھی ۔ بی جے پی قومی صدر امت شاہ نے واضح طور پر کہا تھا کہ انہوں نے بہار میں مہاگٹھ بندھن کی حکومت نہیں توڑی ہے بلکہ مسٹر کمار نے خود ہی بی جے پی سے ہاتھ ملایا ہے۔ مسٹر یادو نے الزام لگایا کہ مسٹر کمار بی جے پی کے ساتھ مل کر ان کے اور ان کے بیٹے کے خلاف سازش کررہے ہیں۔ مسٹر کمار نے مہاگٹھ بندھن کو توڑ کر خود کو سیاسی طورپر خودکشی کرلی ہے اور خود کو ختم کرلیا ہے۔

بی جے پی اور آر ایس ایس راہل اور میرے خاندان کو نشانہ بنا رہی ہے: لالو پرساد یادو

لالو پرساد یادو: فائل فوٹو

آر جے ڈی صدر نے کہا کہ نئی حکومت میں بی جے پی کے جتنے بھی وزیر بنے ہیں وہ خدمت نہیں بلکہ پیسہ کمانے آئے ہیں۔ وزیر اعلی مسٹر کمار کو ایک بڑا موقع پرست قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ان پر اب کوئی بھی سیاسی جماعت بھروسہ نہیں کرسکتی ۔ سال 2019میں ہونے والے لوک سبھا الیکشن میں بی جے پی مسٹر کمار کی پارٹی جنتا دل یو کو صرف دو سیٹیں دے گی۔ مسٹر یادو نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ نائب وزیر اعلی اور بی جے پی کے سینئر رہنما سشیل کمار مودی جس سبھاش پرساد یادو کے سلسلے میں پارٹی کی ہونے والی ریلی کے لئے پیسہ دینے کا الزام لگارہے ہیں وہ پوری طرح بے بنیاد ہے۔ ریت کے کاروباری سبھاش یادو کو سابقہ حکومت میں مسٹر مودی کے نائب وزیر اعلی رہتے ہوئے ریت کا ٹھیکہ دیا گیا تھا جو انہوں نے ہی دیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز