چارہ گھوٹالہ معاملہ میں تین بجے آئے گا فیصلہ، لالو یادو نے کہا: عدلیہ پربھروسہ

پٹنہ۔21 سال پرانے اس چارہ گھوٹالے میں بہار کے دو سابق وزیر اعلی لالو پرساد اور ڈاکٹر جگن ناتھ مشرا سمیت 22 ملزمان پر سی بی آئی کی خصوصی عدالت اپنا فیصلہ سنائے گی۔

Dec 23, 2017 11:14 AM IST | Updated on: Dec 23, 2017 01:44 PM IST

رانچی۔ اربوں روپے کے مشہور چارہ گھوٹالہ معاملہ 64اے /96 میں آج سی بی آئی کے خصوصی جج شیوپال سنگھ تین بجے دن میں اپنا فیصلہ سنائیں گے۔ بہار کے سابق وزیراعلی لالو پرساد یادو اور سابق وزیر اعلی جگناتھ مشر آج عدالت میں ساڑھے دس بجے کے آس پاس پیش ہوئے تو انہیں بتایا گیا کہ اس معاملے میں تین بجے فیصلہ سنایا جائےگا۔ اس معاملے میں مسٹر پرساد سمیت 22لوگوں پرمقدمہ چل رہا ہے۔ مسٹر مشر اور مسٹر لالو سمیت سبھی کے خلاف تین بجے فیصلہ آئےگا۔

واضح رہے کہ چارہ گھوٹالے کا یہ معاملہ دیو گھر کوشاگار سے 89لاکھ روپے سے زیادہ کی غیر قانونی کلیئرنس کا ہے۔ سال 1990 سے 1994 کے درمیان دیوگھر خزانے سے 89 لاکھ، 27 ہزار روپے کا فرضی واڑہ کرکے غیر قانونی طریقے سے جانوروں کے چارے کے نام پر نکاسی کے اس معاملے میں کل 38 لوگ ملزم تھے، جن کے خلاف سی بی آئی نے 27 اکتوبر 1997 کو مقدمہ نمبر آرسی / 64 اے / 1996 درج کیا تھا اور تقریبا 21 سال بعد اس معاملے میں ہفتہ کو فیصلہ آنے کا امکان ہے۔

چارہ گھوٹالہ معاملہ میں تین بجے آئے گا فیصلہ، لالو یادو نے کہا: عدلیہ پربھروسہ

میسا بھارتی اپنے والد اور آر جے ڈی سربراہ لالو یادو کے ساتھ پٹنہ میں۔ فائل فوٹو، پی ٹی آئی۔

اس مقدمے میں لالو، سابق وزیر اعلی جگن ناتھ مشرا، بہار کے سابق وزیر ودیا ساگر نشاد، پی اے سی کے اس وقت کے صدر جگدیش شرما اور دھروبھگت، آر کے رانا، تین آئی اے ایس افسر پھول چند سنگھ، بیک جولیس اور مہیش پرساد، خزانے کے افسر ایس کے بھٹاچاریہ، ڈاکٹر کے کے پرساد اور باقی دیگر چارہ سپلائر ملزمین تھے۔ تمام 38 ملزمان میں سے جہاں 11 کی موت ہو چکی ہے، وہیں تین سی بی آئی کے گواہ بن گئے جبکہ دو نے اپنا گناہ قبول کر لیا تھا، جس کے بعد انہیں 2006-07 میں ہی سزا سنائی گئی تھی۔

وہیں، کروڑوں روپے کے چارہ گھپلہ معاملے میں عدالت کے آج آنے والے فیصلے سے پہلے راشٹریہ جنتا دل(آر جے ڈی) صدر لالو پرساد یادو نے حامیوں سے پرسکون رہنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ انہیں عدلیہ پر پورا بھروسہ ہے۔ مسٹر یادو نے آج یہاں کہا،’’مجھے ملک کی عدلیہ پر پورا بھروسہ ہے اور امید ہے کہ چارہ گھپلے کے باضابطہ معاملے 64اے/96میں انہیں انصاف ملے گا۔‘‘انہوں نے کہا کہ عدلیہ کا فیصلہ جو بھی ہو لیکن وہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جےپی) کو ملک سے اکھاڑ کر رہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پورے بہار اور ملک کے عوام ان کے ساتھ کھڑے ہیں۔

وہیں آر جے ڈی کے سینئر لیڈر اور سابق مرکزی وزیر رگھوونش پرساد سنگھ نے کہا کہ عدالت کا فیصلہ جو بھی ہو،اس کا آر جے ڈی پر کوئی بھی اثر نہیں پڑے گا اور ان کی پارٹی بی جے پی کے خلاف اپنی لڑائی جاری رکھے گی۔ مسٹر سنگھ نے کہا کہ ملک کے عدالتی نظام پر انہیں پورا بھروسہ ہے۔ لالو یادو لوگوں کے دلوں میں بستے ہیں اور جمہوریت میں عوام ہی مالک ہوتے ہیں۔ جتنی بار آرجے ڈی پر حملہ ہوا ہے پارٹی اور بھی مضبوط ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پوری پارٹی متحد ہے اور عدالت کے فیصلے سے پارٹی کے اتحاد پر کوئی فرق نہیں پڑے گا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز