بہار سیلاب زدگان کی امداد کیلئے دئے چیک سے مہاراشٹر بی جے پی کی زبردست کرکری ، ہوئی بڑی غلطی

Sep 17, 2017 07:03 PM IST | Updated on: Sep 17, 2017 07:03 PM IST

پٹنہ : بہار کے سیلاب زدگان کی راحت کے نام پر ملنے والا ایک چیک سوشل میڈیا پر ٹرینڈ کررہا ہے ۔ بی جے پی کی مہاراشٹر یونٹ کی جانب سے بہار بی جے پی کو ملے اس چیک کو ہفتہ کو ایک پروگرام میں بہار بی جے پی کے سینئر لیڈروں کو سونپا گیا ۔ اس چیک کے ذریعہ بہار کے سیلاب راحتی فنڈ میں رقم جمع کرائی جانی ہے۔

اس چیک کو لینے کیلئے مرکزی وزیر گری راج سنگھ اور بہار بی جے پی کے صدر نتیانند رائے خود ممبئی گئے تھے ، لیکن چیک کو قبل کرنے کے دوران دونوں سے بڑی غلطی ہوگئی ۔اس کے بعد جو تصویریں سامنے آئیں ، اس نے چیک کو موضوع بحث بنادیا۔ دراصل چیک پر نمبر میں لکھی رقم اور حرف میں لکھی رقم الگ الگ تھی ۔

بہار سیلاب زدگان کی امداد کیلئے دئے چیک سے مہاراشٹر بی جے پی کی زبردست کرکری ، ہوئی بڑی غلطی

غلطی بھی چھوٹی موٹی نہیں بلکہ پورے پانچ لاکھ روپے کی ہے۔ تصیر میں صاف طور پر دکھ رہا ہے کہ چیک پر نمبر میں کچھ اور لکھا جبکہ انگریزی حروف میں کچھ اور۔ اس چیک میں نمبروں میں 12500000 یعنی ایک کروڑ 25 لاکھ روپے لکھا جبکہ انگریزی حروف میں ایک کروڑ 20 لاکھ روپے لکھا ہے۔

اس تصویر کو سب سے پہلے ممبئی بی جے پی کے صدر آشیش شیلار نے ٹویٹ کیا ۔ اس کے بعد بہار بی جے پی نے صدر نتیانند رائے اور پھر بہار کے بی جے پی کے فائر برانڈ لیڈر گری راج سنگھ نے بھی ری ٹویٹ کیا ، لیکن بہار اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر تیجسوی یادو نے چیک میں ہوئی بڑی غلطی کو اجاگر کیا۔

تیجسوی یادو نے تصویر کو ٹویٹ کرکے لکھا کہ کیا فراڈ ایونٹ ہے ، ممبئی بی جے پی کے صدر بہار بی جے پی صدر کے ساتھ ایک مرکزی وزیر کو ایک کروڑ 20 لاکھ اور 12500000 روپے کا چیک دے رہیں ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز