بہار میں طلوع آفتاب کی پرستش کے ساتھ ہی چھٹھ پوجا اختتام پذیر، بھگوان بھاشكرکے درشن کیلئے نظر آئی بھیڑ

Oct 27, 2017 12:57 PM IST | Updated on: Oct 27, 2017 12:57 PM IST

پٹنہ: راجدھانی پٹنہ سمیت ریاست بہار کے مختلف اضلاع میں آج طلوع آفتاب کی پرستش کے ساتھ ہی چھٹھ کا تہوارعقیدت و احترام کے ساتھ ختم ہوگیا۔ راجدھانی پٹنہ میں آج گنگا ندی کے علاوہ ریاست کے دیگر حصوں میں لاکھوں عورت اور مرد ورت رکھنے والوں نے طلوع آفتاب کو ندیوں اور تالابوں میں اس کی پوجا کی۔ضلع اورنگ آبادکے دیو میں واقع تریتیہ دور کے سوریہ مندر میں بھی لاکھوں کی تعداد میں عقیدتمندوں نے پوجا ارچنا کی اور ورت رکھنے والوں نے ’سوریہ کنڈ‘میں پوجا کی ۔

اس موقع پر نہایت دلکش طریقے سے سجائے گئے دیو کے تریتیہ دور کے سوریہ مندر میں آج صبح سے ہی بھگوان بھاشكر کے درشن کے لئے ورت رکھنے والوں اور عقیدتمندوں کی لمبی قطار لگی ہوئی تھی۔اس دوران ملک کے مختلف صوبوں سے آئےلاکھوں عقیدتمندوں اور ورت رکھنے والوں نے ’چھٹی میّا‘ کے گیتوں سے پورا ماحول گ گونج رہاتھا۔ روایت ہے کہ دیو میں مقدس ’سوریہ کنڈ‘ میں اشنان کرکے بھگوان بھاشكر کی پوجاکرنے اور تریتیہ دور کے سوریہ مندر میں بھگوان کے درشن کرنے سے تمنائیں پوری ہوتی ہیں۔

بہار میں طلوع آفتاب کی پرستش کے ساتھ ہی چھٹھ پوجا اختتام پذیر، بھگوان بھاشكرکے درشن کیلئے نظر آئی بھیڑ

بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے روایتی عقیدت کا عظیم تہوار چھٹھ کے آخری دن آج اپنی سرکاری رہائش گاہ پر واقع تالاب میں مکمل سادگی اور احترام کے ساتھ طلوع آفتاب اور بھگوان بھاشكر کی پوجا کی اور بھگوان سے ریاست اور ملک کے باشندوں کی خوشی، امن وامان اور خوشحالی کے لئے دعا کی۔

بہار کی سابق وزیر اعلی رابڑی دیوی نے بھی اپنی سرکاری رہائش گاہ پر بھگوان بھاشكر کو عقیدت پیش کیا۔ اس موقع پر مسز رابڑی دیوی کے شوہر اور راشٹریہ جنتا دل کے صدر لالو پرساد، ان کے بیٹے تیج پرتاپ یادو اور تیجسوی یادو، بیٹی میسا بھارتی اور ان کے رشتہ داروں کے علاوہ کئی دوسرے افراد بھی موجودوہاں تھے۔ پوجا ارچنا کرنے کے بعد عقیدتمندوں کا 36 گھنٹے کا ورت ختم ہوا اور اس کے بعد هي ورت رکھنے والوں نے انا ج کھایا۔ چار روزہ اس مہاپرو کے تیسرے دن کل ورت رکھنے والوں نے ندیوںاورتالابوں سورج کی پرستش کی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز