میگھالیہ میں کانگریس کو لگ سکتا ہے بڑا جھٹکا ، پانچ ممبران اسمبلی این پی پی میں ہوں گے شامل

Dec 27, 2017 06:12 PM IST | Updated on: Dec 27, 2017 06:12 PM IST

شیلانگ: میگھالیہ میں کانگریس اور دیگر جماعتوں کے آٹھ اراکین اسمبلی پارٹی سے استعفی دیکر نیشنل پپلس پارٹی (این پی پی) میں شامل ہوں گے۔ این پی پی سربراہ کانراڈ کے سنگما نے آج یہاں بتایا کہ کانگریس کے راویل لنگدوہ ، پرسٹون تنسونگ، کمنگون یمبان، نیاوبھلانگ دھر اور گائی تلینگ دھر اور اپوزیشن جماعت یونائیٹڈ ڈیموکریٹک پارٹی کے رکن اسمبلی ریمنگٹن پنگروپ اور دو آزاد رکن اسمبلی اسٹیفن مکھم اور ہوپ فل بامن این پی پی میں شامل ہوں گے۔

انہوں نے بتایا کہ این پی پی میں شامل ہونے والے تمام اراکین اسمبلی انتخابات میں پارٹی کے ٹکٹ پر الیکشن لڑیں گے۔مسٹر سنگما نے کہاکہ ان اراکین اسمبلی کے این پی پی میں شامل ہونے سے پتہ چلتا ہے کہ ریاست کے لوگ تبدیلی چاہتے ہیں ۔ ان اراکین اسمبلی کے پارٹی میں آنے سے آئندہ اسمبلی انتخابات میں پارٹی کی شبیہ کی تشہیر بھی ہوگی۔

میگھالیہ میں کانگریس کو لگ سکتا ہے بڑا جھٹکا ، پانچ ممبران اسمبلی این پی پی میں ہوں گے شامل

این پی پی بی جے پی کی قیادت والی قومی جمہوری اتحاد (این ڈی) حکومت میں اتحادی پارٹی ہے۔ این پی پی آسام کے وزیرخزانہ ہمانت وشو شرما کی صدارت والے شمال مشرقی ڈیموکریٹک الائنس کا ایک حصہ بھی ہے۔ریاست میں آئندہ اسمبلی انتخابات کے لئے وزیراعظم نریندر مودی نے بھارتیہ جنتا پارٹی کی انتخابی تشہیر شروع کردی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز