کمبلے- کوہلی معاملہ پر سوربھ گنگولی نے توڑی اپنی خاموشی ، کہا : مناسب طریقے سے سنبھالا نہیں گیا

Jun 28, 2017 05:59 PM IST | Updated on: Jun 28, 2017 05:59 PM IST

کولکاتہ : سابق ہندوستانی کپتان اور ہندستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ (بی سی سی آئی) میں کرکٹ ایڈوائزی کمیٹی (کے اے سی ) کے رکن سوربھ گنگولی نےکوچ انل کمبلے اور کپتان وراٹ کوہلی کے تنازعہ پر پہلی مرتبہ اپنی خاموشی توڑتے ہوئے کہا ہے کہ اس معاملے کو مناسب طریقے سے سنبھالا نہیں گیا۔ ہندستانی کرکٹ ٹیم کے کوچ سلیکشن کی ذمہ داری سنبھال رہی کے ای سی نے ہی گزشتہ سال سابق کرکٹر کمبلے کو کوچنگ کا ضروری تجربہ نہ ہونے کے باوجود ترجیح دیتے ہوئے قومی ٹیم کے لیے کوچ مقرر کیا تھا۔ اس تین رکنی کمیٹی میں گنگولی کے علاوہ وی وی ایس لکشمن اور سچن تندولکر بھی شامل ہیں۔

کپتان وراٹ کے ساتھ اختلافات اور تنازعہ کے سبب کمبلے نے اپنی معیاد ختم ہونے کے بعد چیمپئنز ٹرافی کے اختتام کے فوراً بعد لندن میں ہی استعفی کا اعلان کر دیا تھا۔ گنگولی نے پہلی بار اس معاملےپر کوئی تبصرہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جو بھی کوچ اور کپتان کے اس تنازعہ کو حل کرنے کی ذمہ داری سنبھال رہے تھے انہوں نے مناسب طریقے سے اس مسئلے کو نہیں دیکھا۔

کمبلے- کوہلی معاملہ پر سوربھ گنگولی نے توڑی اپنی خاموشی ، کہا : مناسب طریقے سے سنبھالا نہیں گیا

ایسا مانا جارہا ہے کہ خود کرکٹ ایڈوائزری کمیٹی (کے اے سی) بھی وراٹ اور کمبلے کے درمیان اختلافات حل کرنے میں مصروف تھی لیکن وراٹ کے ساتھ بات چیت کے بعد انہیں اس بات کا احساس ہوا کہ اب اس مسئلے کا حل ممکن نہیں ہو گا۔ گنگولی نے یہاں کولکتہ میں صحافیوں سے کہا "مجھے لگتا ہے کہ کمبلے اور کوہلی کے درمیان اس پورے تنازعہ کے مسئلے کو اور بہتر طریقے سے حل کیا جا سکتا تھا، لیکن یہ معاملہ غلط طریقے سے دیکھا گیا۔

اس سے قبل اتوار کو گنگولی نے بی سی سی آئی کے منتظمین کی کمیٹی اور ریاستی ایسوسی ایشن کی میٹنگ میں اس بات سے انکار کیا تھا کہ کے اے سی نے اس پورے تنازعہ کی گہرائی کو سمجھا نہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ کمیٹی کس طرح کا کوچ قومی ٹیم کے لیے چاہتی ہے۔ بی سی سی آئی نے کمبلے کے استعفی دینے کے بعد ہندستانی ٹیم کے نئے کوچ کے عہدے پر درخواست کی میعاد بھی بڑھا کر 9جولائی تک کر دی ہے اور ساتھ ہی عہدہ کے لئے مزید درخواستیں طلب کی گئی ہیں جس کے بعد منگل کو ہی سابق ٹیم ڈائریکٹر روی شاستری نے کوچ کے عہدے کیلئے درخواست دی ہے۔

شاستری کی درخواست پر گنگولی نے کہا "کوئی بھی اس عمل کے لئے اپنی درخواست دے سکتا ہے۔ اگر میں مہتمم نہیں ہوتا تو میں بھی اس کے لیے درخواست دے سکتا تھا۔ ہم درخواست دہندگان میں سے بہترین امیدوار کو دیکھیں گے۔

واضح ر ہے کہ گزشتہ سال جب کے اے سی نے کوچ کے عہدے کے لیے انٹرویو کیے تھے تب گنگولی شاستری کا انٹرویو کرنے کے دوران موجود ہی نہیں تھے۔ اس پر شاستری نے سخت رد عمل ظاہر کیا تھا۔وہیں گنگولی نے شاستری پر پریزنٹیشنز نہ دینے کا الزام لگایا تھا۔

وہیں کمبلے کے استعفی کے بعد بھی شاستری نے کوچ کے عہدے کے لیے درخواست نہیں کیا تھا لیکن حال میں اچانک انہوں نے اپنا فیصلہ بدل دیا۔ سمجھا جاتا ہے کہ اس سے پہلے شاستری کی درخواست نہ دینے پر وراٹ نے مایوسی ظاہر کی تھی جو سابق ڈائریکٹر کے کافی قریبی مانے جاتے ہیں۔ شاستری سے پہلے جو بنیادی کوچ کے عہدے کی دوڑ میں شامل ہیں اور درخواست کر چکے ہیں ان میں سابق کرکٹر وریندر سہواگ، ٹام موڈی، رچرڈ پائبس اور لال چند راجپوت شامل ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز