اورائی بلاک کے درجنوں گاؤں میں سیلاب سے تباہی، سوشل میڈیا کے ذریعہ مدد کی اپیل

موصولہ اطلاع کے مطابق بیشی گاؤں کو ہر طرف سے سیلاب کے پانی نے گھیر رکھا ہے اورسڑکوں کے ٹوٹ جانے سے بلاک سے رابطہ منقطع ہو چکا ہے۔

Aug 17, 2017 08:04 PM IST | Updated on: Aug 17, 2017 08:04 PM IST

مظفر پور۔ ضلع کے اورائی اور کٹرہ بلاک کے درجنو ں گاؤں میں سیلاب کا پانی داخل ہوگیا ہے۔ مسلسل ہو رہی بارش اور سیلاب سے سیکڑوں افراد متاثر ہوئے ہیں اور اونچی جگہوں پر پناہ لیے ہوئے ہیں۔  اورائی بلاک کے ہرپوربیشی،اسری اور بیجناتھ بیشی  کے علاوہ علی نگر،ہرنی ٹولہ ،ببھن گنواں،اترار ،مہوارہ،بیشن پور، نیا گاؤں ،شش ولی،چنڈیہا،مقصود پور،سمری اور رام پور سمیت متعدد گاؤں میں سیلاب کا پانی داخل ہوکر تباہی پھیلا رہا ہے۔ان گاؤں کی بیشتر آبادی سیلاب سے بری طرح متاثر ہے۔

اورائی بلاک کے درجنوں گاؤں میں سیلاب سے تباہی، سوشل میڈیا کے ذریعہ مدد کی اپیل

موصولہ اطلاع کے مطابق بیشی گاؤں کو ہر طرف سے سیلاب کے پانی نے گھیر رکھا ہے اورسڑکوں کے ٹوٹ جانے سے بلاک سے رابطہ منقطع ہو چکا ہے۔ حالات بہت خراب ہیں اور گاؤں کے باشندے بیجناتھ بیشی کے پل پر پناہ لیے ہوئے لوگوں کو کھانے پینے کا انتظام کر رہے ہیں۔ اسی طرح یوجنا باندھ پر کئی گاؤں کے لوگ پناہ لیے ہوئے ہیں۔اس علاقے میں ابھی تک سرکاری طور پر کوئی امداد نہیں پہنچی ہے۔ گاؤں کے باشندے فیس بک اور وہاٹس ایپ کے توسط سے مقامی انتظامیہ سے مدد کی اپیل کررہے ہیں اور علاقے کی تباہی کی تصاویر فیس بک پر ڈال رہے ہیں۔ ادھرسماجی تنظیم خدمت خلق ٹرسٹ انڈیا نے علاقے میں سیلاب سے مچی تباہی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے لوگوں سے اپیل کی ہےکہ وہ پریشان حال لوگوں کی مدد کے لئے آگے آئیں۔ ٹرسٹ سے جاری بیان کے مطابق بہت سے متاثرین نے مدد کی فریاد کی ہے۔

ٹرسٹ کے جنرل سیکریٹری ڈاکٹر ایس قاسمی نے بتایا کہ دن و رات ہو نے والی شدید بارش میں سیکڑوں افراد سڑکوں پر کھلے آسمان کے نیچے بھوکے پیاسے رہنے پر مجبور ہیں،ہر طرف افرا تفری اور بے چینی کا عالم ہے،انہیں صاف پانی نہیں مل رہا ہے ۔ نل اور ہینڈ پائب ڈوب گئے ہیں۔ ضعیف ،عورتیں اور بچوں کا براحال ہے۔ معصوم بچوں کو دودھ اور غذائیں نہیں مل رہی ہیں۔ بیماروں کے علاج و معالجے کے لئے کوئی سہولت نہ ہونے کی وجہ سے کئی طرح کی آفتوں میں لوگ مبتلا ہیں۔ مصیبت اور پریشانی کی اس گھڑی میں ملت اسلامیہ کے ہمدردوں کو ،بہی خواہوں کو آگے آنے کی سخت ضرورت ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز