ممتا بنرجی کی ریلی کی وجہ سے تاریخی ٹیپو سلطان مسجد میں جمعہ کی نماز کے وقت میں تبدیلی

Jul 17, 2017 02:49 PM IST | Updated on: Jul 17, 2017 02:49 PM IST

کلکتہ۔ ممتا بنرجی کی قیادت والی ترنمول کانگریس کی سالانہ شہید دیوس ریلی کے پیش نظر کلکتہ شہر کے قلب میں واقع تاریخی ٹیپوسلطان مسجد کی انتظامیہ نے جمعہ کی نماز کے وقت میں تبدیلی کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔  21جولائی کو ممتا بنرجی کی قیادت والی ترنمول کانگریس ہر سال شہید دیوس کلکتہ کے ایکپلینڈ علاقے میں بڑے پیمانے پر مناتی ہے جس میں لاکھوں افراد کی شرکت ہوتی ہے ۔اس سال 21جولائی کو جمعہ کا دن ہے ۔ چوں کہ ریلی کیلئے اسٹیج مسجد کے عقبی کے حصے میں بنایا جاتا ہے اور مسجد کے آس پاس بڑی بھیڑ ہوتی ہے ۔اس کے پیش نظرمسجد انتظامیہ کمیٹی نے وقت مقررہ سے 20منٹ پہلے جمعہ کی نمازکا وقت مقرر کیا ہے ۔ 1993میں یوتھ کانگریس کی ریلی پر پولس کی فائرنگ میں 13افراد کی موت ہوگئی تھی۔ اس وقت ممتا بنرجی یوتھ کانگریس کی لیڈرتھیں۔

ترنمول کانگریس قائم ہونے کے بعد بھی ممتا بنرجی ہر سال ترنمول کانگریس کے بینر تلے 21جولائی کو شہید دیوس کا اہتمام کرتی ہیں  جس میں 10لاکھ کے قریب افراد شریک ہوتے ہیں ۔اس سال بھی اسی تعداد میں ترنمول کانگریس کے حامیوں کی شرکت متوقع ہے۔ مسجد انتظامیہ نے نماز کے وقت میں تبدیلی پر وضاحت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس وقت حالات بہت ہی زیادہ کشیدہ ہیں، ریلی میں جم غفیر ہونے کی وجہ سے مسجد ٹرسٹی بورڈ نے 20منٹ پہلے ہی جمعہ کی نمازادا کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور امید ہے کہ ایک بجے دن تک جمعہ کی نماز مکمل ہوجائے گی اور اس کے بعد مسجد کا صدر دروازہ بند کردیا جائے گا۔

ممتا بنرجی کی ریلی کی وجہ سے تاریخی ٹیپو سلطان مسجد میں جمعہ کی نماز کے وقت میں تبدیلی

مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی: فائل فوٹو

مسجد کے شریک ٹرسٹی شاہد عالم نے کہا کہ یہ فیصلہ میٹنگ میں موجودہ حالات پر غور و فکر کرنے کے بعد کیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ مسجد کے اطراف پر گہری نگاہ رکھی جائے گی ۔ اس مسئلے پر عوام کا کہنا ہے کہ یہ نماز کے وقت میں تبدیلی کوئی بڑا مسئلہ نہیں ہے ۔مگر یہ پہلی مرتبہ کسی سیاسی جماعت کی ریلی کی وجہ سے نماز کے وقت میں تبدیلی کی جا رہی ہے ۔غلام محمد وقف اسٹیٹ کے چیرمین عارف احمد کا کہنا ہے کہ جمعہ کی نماز  کسی مسجد میں 12.30میں ہوتی ہے اور کسی مسجد میں 2بجے ہوتی ہے ۔اس لیے اگر ٹیپوسلطان مسجد میں جمعہ کی نماز کے وقت میں تبدیلی کرکے 12.45کیا جاتا ہے تو اس میں کوئی پریشانی نہیں ہونی چاہیے۔

مسجد انتظامیہ نے کہا کہ یہ سب نمازیوں کی سہولت کے پیش نظر کیا جارہا ہے تاکہ ریلی کی وجہ سے انہیں کوئی مشکلات کا سامنا نہیں کرنا پڑے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ سب سینئر پولس افسران کے ساتھ تبادلہ خیال کرنے کے بعد ہی کیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ وقت کی تبدیلی کی وجہ سے ریلی اور مسجد کے مائیک کی آواز ایک دوسرے سے نہیں ٹکرائے گی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز