کولکاتہ دھماکہ: بی جے پی اور ترنمول کانگریس کا ایک دوسرے پر ملوث ہونے کا الزام

کولکاتہ کے شمالی اپ نگرعلاقے میں بم دھماکہ کے بعد ترنمول کانگریس اور بی جے پی کے درمیان لفظی جنگ تیز ہوگئی ہے ۔

Oct 02, 2018 08:06 PM IST | Updated on: Oct 02, 2018 08:06 PM IST
کولکاتہ دھماکہ: بی جے پی اور ترنمول کانگریس کا ایک دوسرے پر ملوث ہونے کا الزام

کلکتہ بم دھماکہ کے بعد کی تصویر

کولکاتہ کے شمالی اپ نگرعلاقے میں بم دھماکہ کے بعد ترنمول کانگریس اور بی جے پی کے درمیان لفظی جنگ تیز ہوگئی ہے ۔ ترنمو ل کانگریس نے اشاروں میں اس دھماکہ کیلئے بی جے پی کو ذمہ دار ٹھہراکر اس دھماکے کو سیاسی حملہ قرار دینے کی کوشش کی ہے وہیں بی جے پی نے این آئی اے سے جانچ کرانے کا مطالبہ کیا ہے ۔

دھماکے کے بعد ایک طرف جہاں ترنمو ل کانگریس کے لیڈران نے موقع پر پہنچ کر حالات کا جائزہ لیا وہیں بی جے پی کے ریاستی صدر دلیپ گھوش اور مغربی بنگال بی جے پی کے انچارج کیلاش وجے ورگی نے کہا کہ اس دھماکے کا تعلق ملک کی سلامتی سے ہے اس لیے اس کی جانچ این آئی اے سے کرانے کی ضرورت ہے۔

جنوبی دمدم میونسپلٹی کے چیرمین اور ترنمول کانگریس کے لیڈر پنچو گوپال رائے نے موقع پر پہنچ کر حالات کا جائزہ لیا اور کہا کہ اس کے پیچھے بی جے پی کا ہاتھ اور اس کا مقصد انہیں نشانہ بنانا تھا۔رائے نے کہا کہ 26ستمبر کو بی جے پی نے ہڑتال کا اعلان کیا تھا مگر اس علاقے میں اس کا کوئی اثر نہیں ہوا اور یہاں کے مقامی دوکانداروں نے بی جے پی کی اپیل کو خارج کردیا ہے ۔اس لیے بی جے پی والوں نے مایوسی میں مجھے نشانہ بنانے کیلئے یہ سازش رچی ہے ۔

Loading...

Loading...