افتتاح سے پہلے ہی ڈیم کا ٹوٹ جانا بدعنوانی کا واضح ثبوت، نتیش استعفی دیں: لالو

Sep 20, 2017 05:44 PM IST | Updated on: Sep 20, 2017 05:44 PM IST

پٹنہ۔  راشٹریہ جنتا دل کے سربراہ لالو پرساد یادو نے بہار میں بھاگلپور ضلع میں ٹرائل رن کے دوران پانی کے دباو سے گنگاپمپ نہر پروجیکٹ کے ڈیم کی دیوار ٹوٹ جانے کے معاملے میں وزیر اعلی نتیش کمار اور آبی وسائل کے وزیر راجیو رنجن سنگھ عرف للن سنگھ کو قصور وار ٹھہراتے ہوئے ان سے استعفی دینے اور اس معاملے کی اعلی سطحی انکوائری کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔

مسٹر یادو نے آج یہاں کہا کہ بھاگلپور ضلع کے کہل گاوں میں 828کروڑ روپے کی لاگت سے تیار بٹیشور گنگا پمپ نہر پروجیکٹ کا افتتاح آج صبح نتیش کمار کرنے والے تھے ۔ جلسہ گاہ بھی سج دھج کر تیار تھا لیکن کل شام ٹرائل رن کے دوران باندھ کی دیوار پانی کے دباو سے ٹوگ گئی۔ جس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ باندھ کی تعمیر میں میعار کا خیال نہیں رکھا گیا اور بڑے پیمانے پر بدعنوانی ہوئی ہے۔

افتتاح سے پہلے ہی ڈیم کا ٹوٹ جانا بدعنوانی کا واضح ثبوت، نتیش استعفی دیں: لالو

لالو پرساد یادو: فائل فوٹو

انہوں نے کہا کہ اس کی نگرانی کا ذمہ محکمہ کے وزیر اور وزیر اعلی کا ہے۔ اس معاملے میں لاپرواہی ہوئی ہے اس لئے جانچ سے پہلے قصور وار وزیر اور وزیر اعلی کو استعفی دے دینا چاہئے۔ آر جے ڈی سربراہ نے کہا کہ ا س سے قبل شمالی بہار میں جو سیلاب سے تباہی ہوئی اس کے لئے بھی وزیر اعلی اور آبی وسائل کے وزیر ہی ذمہ دار ہیں۔ وہ پہلے سے ہی کہتے رہے ہیں کہ سیلاب اچانک نہیں آئی تھی بلکہ اسے جان بوجھ کر لایا گیا تھا۔

 بھاگلپور ضلع کے کہل گاوں میں 828کروڑ روپے کی لاگت سے تیار بٹیشور گنگا پمپ نہر پروجیکٹ کا افتتاح آج صبح نتیش کمار کرنے والے تھے ۔ بھاگلپور ضلع کے کہل گاوں میں 828کروڑ روپے کی لاگت سے تیار بٹیشور گنگا پمپ نہر پروجیکٹ کا افتتاح آج صبح نتیش کمار کرنے والے تھے ۔

انہوں نے کہا کہ شمالی بہار میں جب سیلاب آیا تو آبی وسائل کے وزیر نے کہا تھا کہ باندھ کے اوپر گاوں والے اناج رکھتے تھے جس کی وجہ سے وہاں چوہوں نے گھر بنالیا تھا اور اسی وجہ سے باندھ ٹوٹ گئے تھے۔ اب آبی وسائل کے وزیر بتائیں کہ بھاگلپور میں کیا مگرمچھ نے باندھ کی دیوار توڑی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز