ریزرویشن کو لے کر لالو کا آر ایس ایس پر تیکھا حملہ ، غریبوں کے حقوق کیلئے جدوجہد جاری رکھنے کا اعلان

لالو پرساد یادو نے کہا کہ راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) اپنے استاد ایم ایس گولوالکر کے اصولوں پر چلتے ہوئے ریزرویشن کو ختم کرنا چاہتی ہے

Jan 24, 2017 06:56 PM IST | Updated on: Jan 24, 2017 06:56 PM IST

پٹنہ: راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے صدر لالو پرساد یادو نے آج کہا کہ راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) اپنے استاد ایم ایس گولوالکر کے اصولوں پر چلتے ہوئے ریزرویشن کو ختم کرنا چاہتی ہے لیکن ان کی پارٹی غریب کے حقوق کے لیے آخری وقت تک جدوجہد کرتی رہے گی۔ مسٹر یادو نے یہاں پارٹی کے ریاستی دفتر میں عوامی ہیرو کرپوری ٹھاکر کی 93 ویں سالگرہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آر ایس ایس اور بی جے پی جیسی فرقہ پرست طاقتیں اپنے استاد گولوالکر کا ایجنڈا لاگو کرنے کے لئے ہر شعبدہ بازی اپنانے میں لگی ہے۔ محروم طبقوں کے حقوق کے چھیننے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسی فرقہ پرست طاقتوں کے ارادے کو کبھی بھی پورا نہیں ہونے دیا جائے گا۔

آر جے ڈی سربراہ نے کہا کہ بہار اسمبلی انتخابات سے عین قبل آر ایس ایس کے سربراہ موہن بھاگوت نے ریزرویشن کو ختم کرنے کی بات کہی تھی۔ بہار کے عوام نے اسمبلی کے انتخابات میں اس کا کرارا جواب دیا جس کا نتیجہ یہ ہوا کہ آر ایس ایس اور بی جے پی کو خالی ہاتھ لوٹنا پڑا۔ انہوں نے کہا کہ بہار کے عوام ایسے لوگوں کو بہتر طریقے سے سمجھ رہے ہیں اور کسی بھی بهكاوے میں آنے والی نہیں ہیں۔ مسٹر یادو نے کہا کہ اب اتر پردیش میں اسمبلی کا الیکشن ہونا ہے جسے لوگوں کو بھولنا نہیں چاہیے۔ بہار کی سرحد سے لگے اتر پردیش کے علاقوں میں مکمل یکجہتی کے ساتھ ابھی سے ہی کارکنوں کو لگنے کی ضرورت ہے تاکہ فرقہ پرست طاقتیں اپنے منصوبے میں کبھی کامیاب نہ ہو سکیں۔ انہوں نے کہا کہ اتر پردیش کے انتخابات میں پارٹی کے کارکن پوری مستعدی کے ساتھ رہیں گے اور بی جے پی اور آر ایس ایس کو اکھاڑ پھینکیں گے۔

ریزرویشن کو لے کر لالو کا آر ایس ایس پر تیکھا حملہ ، غریبوں کے حقوق کیلئے جدوجہد جاری رکھنے کا اعلان

آر جے ڈی کے سربراہ نے کہا کہ اتر پردیش میں ہونے والے انتخابات کو دیکھتے ہوئے آر ایس ایس کے ترجمان منموہن وید نے ایک بار پھر سے ریزرویشن کو ختم کرنے کے ساتھ ساتھ اس کا جائزہ لینے کا مسئلہ اٹھایا ہے۔ آر ایس ایس کے ترجمان کے اس سلسلے میں دیئے گئے بیان کے فوراً بعد ہی انہوں نے (مسٹر یادو) جب جوابی حملہ کیا تب کہا گیا کہ یہ ان کی طرف سے دیا گیا بیان نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ آر ایس ایس کے ترجمان نے اپنی وضاحت میں کہا تھا کہ انہوں نے روحانی بنیاد پر ریزرویشن کی بات کہی تھی۔ مسٹر یادو نے سوالیہ لہجے میں کہا کہ روحانی بنیاد پر ریزرویشن دیئے جانے کا آئین میں جب کسی طرح کاالتزام ہی نہیں ہے تو پھر اسے اٹھانا ہی نہیں چاہئے۔ آر ایس ایس اور بی جے پی کے لوگ رات میں کچھ بولیں گے تو دن میں کچھ اور۔ انہوں نے کہا کہ مکر جانے میں انہیں مہارت حاصل ہے۔

آر جے ڈی کے سربراہ نے کہا کہ حقیقت یہ ہے کہ ملک کے آئین پر آر ایس ایس کا اعتماد ہی نہیں ہے اور وہ ان کے استاد گولوالکر کی کتاب ’’ بنچ آف تھاٹس ‘‘ میں یقین رکھتے ہیں۔ انہوں نے چٹکی لیتے ہوئے گولوالکر کی کتاب کو ہندی میں’’ بوجھ کا مجموعہ ‘‘ بتایا۔ مسٹر یادو نے گرو گولوالکر کی کتاب کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس کتاب کی صفحہ نمبر 25، 168،356 اور 357 میں واضح طور پر ریزرویشن کے سلسلے میں کہا گیا ہے۔ گرو گولوالکر کے اصولوں کو ہی آر ایس ایس اور بی جے پی عملی جامہ پہنانے میں لگی ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نوٹ کی منسوخی کے خلاف ان کی پارٹی اتر پردیش کے اسمبلی انتخابات کے بعد پٹنہ میں ایک ریلی کرے گی۔ انہوں نے عوامی ہیرو کرپوری ٹھاکر کو بھارت رتن کے اعزاز سے نوازے جانے کی ایک تجویز پیش کی جسے متفقہ طور پر منظور کیا گیا۔

Loading...

اس موقع پر نائب وزیر اعلی تیجسوی پرساد یادو، پارٹی کے ریاستی صدر رام چندر پوروے، سابق جنرل سکریٹری مدركا سنگھ یادو، سابق مرکزی وزیر رگھونش پرساد سنگھ، رگھوناتھ جھا، محترمہ کانتی سنگھ، ایم پی جے پرکاش نارائن یادو، سابق ممبر پارلیمنٹ پربھوناتھ سنگھ، وزیر خزانہ عبدالباري صدیقی اور کوآپریٹوز وزیر آلوک کمار مہتا سمیت کئی دیگر رہنماؤں نے اپنے خیالات کا اظہار کئے۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز