نتیش نے سیاہ داغ دھونے کے لئے ہی نئے ڈیٹرجنٹ کا استعمال شروع کیا: لالو

پٹنہ۔ راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے صدر لالو پرساد یادو نے بدعنوانی کے معاملے پر زیرو ٹالرینس کا دعوی کرنے والے وزیر اعلی نتیش کمار پر ایک بار پھر حملہ بولتے ہوئے آج کہا کہ نتیش کمار نے سیاہ داغ دھونے کے لئے ہی آزمائے ہوئے ڈیٹرجنٹ کا استعمال کرنا شروع کیا ہے۔

Aug 02, 2017 04:18 PM IST | Updated on: Aug 02, 2017 04:18 PM IST

پٹنہ۔ راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے صدر لالو پرساد یادو نے بدعنوانی کے معاملے پر زیرو ٹالرینس کا دعوی کرنے والے وزیر اعلی نتیش کمار پر ایک بار پھر حملہ بولتے ہوئے آج کہا کہ نتیش کمار نے سیاہ داغ دھونے کے لئے ہی آزمائے ہوئے ڈیٹرجنٹ کا استعمال کرنا شروع کیا ہے۔ مسٹر یادو نے ایسوسی ایشن فار ڈیموکریٹک ریفارمس (اے ڈی آر) کی رپورٹ میں ریاست کی نئی حکومت میں 75 فیصد سے زیادہ وزراء کے خلاف مجرمانہ مقدمات درج ہونے کا حوالہ دیتے ہوئے مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پر اپنے خاص انداز میں لکھا، "سیاہ داغ دھونے کے لئے ہی تو آزمائے ہوئے ڈیٹرجنٹ کا استعمال کرنا شروع کیا ہے۔ "

اس ٹویٹ کے ذریعے مسٹر یادو نے اشاروں ہی اشاروں میں نتیش کمار کے حالیہ اتحادی بھارتیہ جنتا پارٹی پر بھی حملہ بولا ہے۔ ایک اور ٹویٹ میں راشٹریہ جنتا دل سپريمو نے ضمیر پر اپنے عہدے سے استعفی دینے کے نتیش کمار کے فیصلے پر طنز کرتے ہوئے کہا، "ارے بھیا، کیوں ضمیر کو چیلنج کر رہے ہو؟ ضمیر کو تمام لوگ کرسی آتما سمجھ رہے ہیں کیا۔ " وہیں مسٹر یادو کی ٹویٹس پر ریاست کے سابق نائب وزیر اعلی تیجسوی یادو نے ریٹويٹ کرتے ہوئے لکھا، "انہیں داغ اچھے لگتے ہیں اور داغیوں سے پرانا گہرا رشتہ ہے۔ بے داغ تصویر اگلےصف میں بیٹھے یہ کیسےہضم ہوتا۔ "

نتیش نے سیاہ داغ دھونے کے لئے ہی نئے ڈیٹرجنٹ کا استعمال شروع کیا: لالو

غیر سرکاری تنظیم اے ڈی آر نے اپنی ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ بی جے پی کے ساتھ مل کر نتیش کمار کی قیادت میں بنی بہار کی نئی حکومت کے 75 فیصد سے زیادہ وزراء کے خلاف مجرمانہ مقدمات درج ہیں۔ رپورٹ کے مطابق، ریاست کی موجودہ جنتا دل یونائٹیڈ، بھارتیہ جنتا پارٹی اور لوک جن شکتی پارٹی کی مشترکہ حکومت کے 29 میں سے 22 وزراء کے خلاف مجرمانہ معاملے درج ہیں جبکہ گزشتہ مهاگٹھ بندھن حکومت میں کل 28 وزراء میں سے 19 وزیر داغدار تھے۔ بہار الیکشن واچ اور اے ڈی آر کی جانب سے وزیر اعلی سمیت 29 وزراء کے انتخابی حلف نامے کے تجزیہ کے بعد یہ رپورٹ تیار کی گئی ہے۔ رپورٹ کے مطابق، موجودہ حکومت کے جن 22 وزراء نے اپنے خلاف فوجداری مقدمات ہونے کی تفصیل مہیا کی ہے، ان میں 9 کے خلاف سنگین مجرمانہ معاملے درج ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز