ایکسکلوزیو: بہار میں جے ڈی یو-آر جے ڈی-کانگریس کا مہا گٹھ بندھن ٹوٹنے کے دہانے پر

Jun 27, 2017 07:11 PM IST | Updated on: Jun 27, 2017 07:11 PM IST

پٹنہ۔ بہار میں جے ڈی یو-آر جے ڈی-کانگریس کا مہا گٹھ بندھن ٹوٹنے کے دہانے پر پہنچ چکا ہے۔ صدارتی انتخابات میں نتیش کمار کی طرف سے این ڈی اے امیدوار رام ناتھ كووند کو حمایت دینے کے بعد یہ دراڑ بڑھنے لگی تھی۔ اس سلسلے میں جلد ہی اعلان ہونے کی بات کہی جا رہی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ نتیش کمار نے لالو یادو اور ان کے خاندان پر لگ رہے الزامات سے اپنی پارٹی کو دور رکھنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

نیوز 18 کو اعلیٰ ذرائع نے بتایا کہ نتیش کمار آر جے ڈی سربراہ کو اور وقت دینے کو تیار تھے لیکن لالو کے بی جے پی سے سمجھوتہ کی کوششوں کے چلتے ایسا نہیں ہو گا۔ لالو کی بی جے پی سے دوریاں کم کرنے کی کوششوں سے نتیش کمار کی حیثیت ڈانواڈول ہو سکتی تھی۔ 243 سیٹوں والی اسمبلی میں جے ڈی یو کے پاس 71 نشستیں اور آر جے ڈی کے پاس 80 سیٹیں ہیں۔ بی جے پی کے پاس 53 سیٹیں ہیں۔

ایکسکلوزیو: بہار میں جے ڈی یو-آر جے ڈی-کانگریس کا مہا گٹھ بندھن ٹوٹنے کے دہانے پر

بتا دیں کہ نتیش کمار اور لالو یادو سال 2015 میں اسمبلی انتخابات کے دوران ایک ساتھ آئے تھے۔ دونوں نے بی جے پی کو شکست دینے کے لئے ہاتھ ملایا تھا۔ اس سے پہلے دونوں تقریبا 20 سال تک ایک دوسرے کے اپوزیشن میں تھے۔ مہا گٹھ بندھن میں ٹوٹ کی باتیں گزشتہ ہفتے جے ڈی یو کے این ڈی اے امیدوار رام ناتھ كووند کو حمایت پر بضد رہنے کے بعد تیز ہو گئی تھیں۔ آر جے ڈی اور کانگریس نے میرا کمار کو حمایت دی ہے اور انہوں نے جے ڈی یو کو بھی اپنا فیصلہ تبدیل کرنے کو کہا تھا۔ لیکن جے ڈی یو نے صاف کر دیا تھا کہ وہ اپنا فیصلہ نہیں بدلے گی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز