ممتا بنرجی کا بی جے پی پر سوشل میڈیا کے ذریعے فرقہ وارانہ فساد پھیلانے کا الزام

Jul 06, 2017 03:02 PM IST | Updated on: Jul 06, 2017 03:02 PM IST

کلکتہ ۔ وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے بی جے پی پر سوشل میڈیا کے ذریعہ فرقہ وارانہ فسادات کرانے اور افواہ پھیلانے کا الزام عاید کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کی حکومت نے ریاست میں امن و امان اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی برقرار رکھنے کیلئے’’ امن فورس ‘‘ قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ ریاستی سیکریٹریٹ میں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے ممتا بنرجی نے کہا کہ بی جے پی سوشل میڈیا کا غلط استعمال کررہی ہے ۔سوشل میڈیا کے ذریعہ افواہ پھیلانا بی جے پی کا طریقہ کار بن گیا ہے ۔اس کے ذریعہ عام آدمی کے درمیان دوریاں پیدا کی جارہی ہیں ۔اس لیے حکومت نے مقامی لوگوں کے ساتھ مل کر امن فورس بنانے کا فیصلہ کیا جس میں ریاستی انتظامیہ اور پولس بھی شامل ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ اس فورس کا نام ’’شانتی باہنی‘‘ ہو گا جو ریاست میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی قائم کرنے میں اپنا کردار ادا کرے گی۔

وزیرا علیٰ نے کہا کہ بنگال میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی کے ماحول کو خراب کرنے کیلئے مسلسل سازشیں رچی جارہی ہیں ۔ شانتی واہنی مقامی سطح پر فرقہ واریت پھیلانے والے عناصر پر گہر ی نظر رکھے گی اور واہنی میں مندر اور مسجد کے مقامی انتظامیہ سے بھی شامل ہونے کی اپیل کی جائے گی۔ ممتا بنرجی نے کہا کہ بی جے پی کا یہ ماڈرن طریقہ ہے ۔اس لیے عوام کو اس سے آگاہ ہونے کی ضرورت ہے ۔بی جے پی کو فرقہ وارانہ فسادات کی نشاندہی کرنے کا لائسنس نہیں ہے مگر یہ لوگ کررہے ہیں اور عوام میں افواہ پھیلاتی ہے۔وزیرا علیٰ نے کہا کہ بنگلہ دیش میں کوئی فوٹو گراف پوسٹ ہوتا ہے اور بنگال میں فرقہ ورانہ فسادات کرانے کیلئے افواہ پھیلایا جاتا ہے ۔

ممتا بنرجی کا بی جے پی پر سوشل میڈیا کے ذریعے فرقہ وارانہ فساد پھیلانے کا الزام

مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی: فائل فوٹو

ممتا بنرجی نے کہا کہ بی جے پی سماجی، سیاسی ، معاشی ترقی کے معاملے میں ترنمول کانگریس کا مقابلہ کرنے میں ناکام ہوچکی ہے۔ اس لیے بی جے پی ترنمول کانگریس ا ور حکومت کے خلاف سازش کررہی ہے۔انہوں نے کہا کہ ترنمول کانگریس کی پیش قدمی کو روکنے کیلئے یہ سب کیا جارہا ہے ۔وزیرا علیٰ نے کہا کہ پولس اکیلے کچھ بھی نہیں کرسکتی ہے ۔ اس لیے شانتی واہنی کے ذریعہ فسادی عناصر کی نشاندہی کی جائے گی اور اس کو ریاست کے تمام بوتھوں پر قائم کیا جائے گا ۔ مقامی تھانہ کی زیر نگرانی شانتی واہنی ہوگی جس میں نوجوانوں کو شامل کیا جائے گا ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز