میں ہندو ہوں ، مگر ہندو توا پریقین نہیں رکھتی : ممتا بنرجی

Apr 19, 2017 10:38 PM IST | Updated on: Apr 19, 2017 10:38 PM IST

کلکتہ : جگن ناتھ مندر دورہ کی مخالفت کے تناظر میں آج وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے جگن ناتھ مندر میں پوجا کرنے کے بعد میں ہندو ہوں ، ہندو پریوار میں پیداہوئی ہوں لیکن میں ہندوتو پر یقین نہیں رکھتی ہوں اور بی جے پی منفی پروپیگنڈے میں لگی ہوئی ہے۔ جگن ناتھ مندر دورہ کی مخالفت سے متعلق سوال کے جواب میں ممتا بنرجی نے کہا کہ بی جے پی کیڈر جو کچھ چاہیں کریں مگر میں جگن ناتھ بھگوان میں یقین رکھتی ہوں ۔میں ان کا آشیرواد لے کر بنگال واپس جارہی ہوں ۔انہوں نے کہا بنگال سے ایک بڑی تعداد میں پوری آتے ہیں اور پوجا کرتے ہیں ۔

وزیر اعلیٰ جو پوری کے سرکٹ ہاؤس میں مقیم ہیں۔وزیر اعلیٰ کل منگل کو بھونیشور آئی ہیں ۔وہ روز ویلی چٹ فنڈ گھوٹالے میں گرفتار ممبر پارلیمنٹ سدیپ بندو پادھیائے اورممبر پارلیمنٹ تاپس پال سے اسپتال میں ملاقات کی ۔ منگل کی شام کو بی جے پی یوا مارچہ نے پوری پولس اسٹیشن کے باہر ممتا بنرجی کے خلاف مظاہرہ کیا اور ان کا پتلا نذر آتش کیا تھا۔جب کہ اڑیسہ کی ریاستی حکومت ممتا بنرجی کو سرکاری مہمان کا درجہ دیا ہے۔ پوری میں سیکورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں ۔ ممتا بنرجی نے ہندو مذہب کے نام پر ٹھیکداری کے دعویدار ی کرنے والی بی جے پی پر سوالیہ نشان لگاتے ہوئے کہا کہ میں ہندو پریوار میں پیدا ہونے کے باوجود ہندتو طاقتوں کی طرح منفی کاموں میں یقین نہیں رکھتی ہوں ۔

میں ہندو ہوں ، مگر ہندو توا پریقین نہیں رکھتی : ممتا بنرجی

ممتا بنرجی نے کہا کہ ’’ہندو مذہب عظیم مذہب ہے ،ہم سب کو رام کرشن اور ان کے شاگر سوامی ویکانند کی زندگی سے سبق لینے کی ضرورت ہے۔ ممتا بنرجی نے گوشت سے متعلق اپنے بیان پر کہا کہ میں لوگوں کی پسندیدگی پر اپنی مرضی تھوپنے کے حق میں نہیں ہوں اور میں سیکولر نظریات کی حامل ہوں اور اس پر یقین رکھتی ہوں۔ اڑیسہ میں قیام کے دوران وزیر اعلیٰ نوین پٹنائیک سے ملاقات سے متعلق سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ میں تمام علاقائی و سیکولر جماعتوں کے اتحاد کے حق میں ہوں تاکہ ملک کے سیکولر آئین کے مخالفین کو شکست سے دو چار کیا جائے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز