موت کے بعد بھی سابق ممبر پارلیمنٹ سلطان احمد کے دفتر کی سی بی آئی نے تلاشی لی

Oct 10, 2017 08:35 PM IST | Updated on: Oct 10, 2017 08:35 PM IST

کلکتہ۔  ناردا اسٹنگ آپریشن معاملے میں سابق ممبر پارلیمنٹ سلطان احمد کے انتقال کے بعد بھی سی بی آئی کے پانچ افسروں کی ایک ٹیم نے سلطان احمد کے دفتر کا جائزہ لیا کہ ناردا نیوز پورٹل کے سی ای او میتھوز سیموئل سے روپیہ لیتے وقت وہ کہا ں بیٹھے ہوئے تھے ۔

سی بی آئی جانچ کے دوسرے مرحلے میں اس معاملے میں ملوث 13افراد کے گھرو ں دفاتر کا جائزہ لے رہی ہے ۔ ا س سے قبل سی بی آئی نے ممبر پارلیمنٹ اپورپا پوددار،سابق ریاستی وزیر مدن مترا ، ریاستی وزیر شوبھندو ادھیکاری اور ممبر اسمبلی اقبال احمد کے دفتر کا جائزہ اور ویڈیو گرافی کرچکی ہے۔

موت کے بعد بھی سابق ممبر پارلیمنٹ سلطان احمد کے دفتر کی سی بی آئی نے تلاشی لی

خیال رہے کہ گزشتہ مہینے 4ستمبر کو دل کا دورہ پڑنے کی وجہ سے سابق ممبر پارلیمنٹ سلطان احمد کا انتقال ہوگیا تھا۔

سی بی آئی ذرائع نے بتایا کہ سید امیر ایونیو میں ذیشان ہوٹل کے اوپر واقع سلطان احمد کے دفتر میں پانچ افسروں کی ایک ٹیم نے جا کر پورے دفتر کا جائزہ لیا اور فوٹو کے ساتھ ساتھ ویڈیو گرافی بھی کی ۔سی بی آئی کے مطابق موجودہ ویڈیو کو اسٹنگ آپریشن کے ویڈیو سے ملایا جائے گا کہ ان دونوں میں کہاں تک مماثلت ہے۔ سی بی آئی کے ذرائع کے مطابق گزشتہ دنوں سی بی آئی افسروں کی ایک ٹیم ممبر اسمبلی و کلکتہ کارپوریشن کے ڈپٹی مئر اقبال احمد کے ہوٹل جو نیو مارکیٹ کے قریب واقع ہے جاکر ویڈیو گرافی کی تھی ۔اس ہوٹل میں میتھوز سیموئل نے کئی بار اقبال احمد سے ملاقات کی تھی ۔سیموئل نے اقبال احمد تک پہنچنے کیلئے مقامی لیڈروں کی مدد حاصل کی تھی اور اقبال احمد نے ہی سیموئل سے ترنمول کانگریس کے دیگر لیڈروں سے متعارف کرایا تھا ۔ پوجا کے بعد سی بی آئی نے ناردا اسٹنگ آپریشن معاملے میں اپنی کارروائی تیز کردی ہے ۔سی بی آئی جلد ہی اس معاملے میں چارج شیٹ جمع کرا سکتی ہے ۔

خیال رہے کہ گزشتہ مہینے 4ستمبر کو دل کا دورہ پڑنے کی وجہ سے سابق ممبر پارلیمنٹ سلطان احمد کا انتقال ہوگیا تھا۔ سلطان احمد کے انتقال کے بعد وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے بیان جاری کرتے ہوئے کہا تھا کہ جانچ کے نام پر مرکزی ایجنسیاں ان کو ہراساں کررہی تھیں اور اس دباؤ کی وجہ سے ہی انہیں دل کا دورہ پڑا ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز