معاشی اعتبار سے کمزور طلبہ کو روزگار سے جوڑرہا ہے پٹنہ اردو اکیڈمی کا این سی پی یو ایل سینٹر

Dec 13, 2017 11:28 PM IST | Updated on: Dec 13, 2017 11:28 PM IST

پٹنہ : این سی پی یو ایل کا کمپیوٹر سینٹرمعاشی اعتبار سے کمزور طلبہ کو روزگار سے جوڑنے کا بڑا سبب بن گیا ہے۔ پٹنہ کے بہاراردو اکیڈمی میں این سی پی یو ایل کا سینٹر اپنے میعار کو کافی بلند کر رکھا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ یہاں سے تکنیکی تعلیم حاصل کر کے غریب طلبہ نہ صرف روزگار سے وابستہ ہو رہے ہیں ، بلکہ اپنے اعلیٰ تعلیم کے لئے بھی یہاں کی تعلیم کو ضروری مانتے ہیں۔

تقریبا 18 سال پہلے بہاراردو اکیڈمی میں شروع کئے گئے این سی پی یو ایل کے اس سینٹر سے اب تک سینکڑوں طلبہ نے تکنیکی تعلیم حاصل کی ہے اور انہیں روزگار سے جڑنے کا موقع ملا ہے۔ یہاں ایک سالہ کمپیوٹر ڈپلومہ کورس میں طلبہ کو تمام بنیادی باتوں کی جانکاری دینے کے ساتھ ساتھ اساتذہ ایک بہتر ماحول بھی فراہم کرتے ہیں۔ خاص بات یہ ہے کہ یہاں سے تعلیم مکمل کرنے طلبہ کے روزگار کے لئے اکیڈمی بھی اپنی سطح پر کوشش کرتی ہے، جس کے نتیجہ کے طور پر کافی طلبہ پٹنہ سمیت دہلی، لکھنؤ اور بیرونی ممالک میں روزگار سے جڑے ہیں۔

معاشی اعتبار سے کمزور طلبہ کو روزگار سے جوڑرہا ہے پٹنہ اردو اکیڈمی کا این سی پی یو ایل سینٹر

سینٹر سپروائزر محمد جمال الدین کا کہنا ہے کہ غریب طلبہ کے خوابوں کو پورا کررہا این سی پی یو ایل کا یہ سینٹر کافی کم پیسہ میں انہیں تکنیکی تعلیم مکمل کرنے کا موقع فراہم کرتا ہے۔ طالب علموں کے مطابق ایک سال کے کورس کے لئے دوسرے اداروں میں کافی پیسہ لیا جاتا ہے جبکہ اردو اکیڈمی میں چل رہے این سی پی یو ایل کےاس سینٹر میں معمولی رقم سے بھی انہیں وہ تمام سہولتیں دستیاب کرا دی جاتی ہیں۔ ایک بیچ میں 40 طلبہ تعلیم حاصل کرتے ہیں۔ اس وقت سینٹر میں دو بیچ چل رہے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز