نتیش کا چیلنج، ہمت ہے تو بہار، یوپی میں دوبارہ الیکشن کروائیں پی ایم مودی

Jun 12, 2017 02:28 PM IST | Updated on: Jun 12, 2017 02:28 PM IST

پٹنہ۔ بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے مرکز کی مودی حکومت پر نشانہ سادھا ہے۔ پیر کو پٹنہ میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کسانوں سے جو وعدہ کیا گیا تھا وہ پورا نہیں کیا گیا۔ انتخابات سے پہلے پی ایم مودی نے کہا تھا کہ پچاس فیصد منافع دلائیں گے لیکن اس سمت میں کچھ بھی نہیں ہوا۔ سی ایم نتیش کمار نے رادھ موہن سنگھ کے یوگ پر نشانہ سادھا۔ انہوں نے چیلنج کیا کہ ہم بہار کا انتخابات کرانے کے لئے تیار ہیں لیکن یوپی اور بہار کے لوک سبھا سیٹوں کا انتخاب کرائیں۔

سی ایم نے کہا کہ زرعی شعبہ بحران سے گزر رہا ہے اور اس کے پیچھے بنیادی مسئلہ ہے کہ لاگت مسلسل بڑھ رہی ہے لیکن پیداوار کی قیمت میں اضافہ نہیں ہو رہا ہے۔ جی ایم سیڈ کو لے کر مرکزی حکومت پر نشانہ لگاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سرسوں اور بیگن کے جی ایم سیڈ کو لے کر ہم نے مخالفت کی ہے لیکن اسے مسلسل پروموٹ کیا جا رہا ہے۔ ملٹی نیشنل کمپنیوں کی اس پر اجارہ داری ہے۔ زراعت میں آگے اور مسائل آ سکتے ہیں۔ سی ایم نے کہا کہ اخراجات زیادہ ہونے اور پیداوار کم ہونے سے کسان سڑکوں پر فصلوں کو پھینک رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ صرف وزارت زراعت کا نام تبدیل کرنے سے کچھ نہیں ہوگا۔ گروپ ڈی کے عملے سے بھی کم آمدنی کسانوں کی ہے۔

نتیش کا چیلنج، ہمت ہے تو بہار، یوپی میں دوبارہ الیکشن کروائیں پی ایم مودی

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز