شراب بندی کے بعد نتیش حکومت اب جہیز کی لعنت اور بچوں کی شادی کے خلاف بھی چلا ئے گی مہم

Apr 10, 2017 10:38 PM IST | Updated on: Apr 10, 2017 10:38 PM IST

پٹنہ: بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے آج ملک میں عدم رواداری اور فرقہ وارانہ ٹکراؤ کے ماحول پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ تمام گاندھی وادی مفکرین کو مل کر معاشرے کو راستہ دکھانا چاہئے۔ مسٹرنتیش کمار نے یہاں سمراٹ اشوک کنونشن سینٹر میں چمپارن ستیہ گرہ کی صدی تقریب کا افتتاح کرتے ہوئے کہا کہ سال 1917 میں آج ہی کے دن مہاتما گاندھی بہار آئے تھے اور مظفر پور ہوتے ہوئے چمپارن گئے تھے۔ اسی چمپارن ستیہ گرہ تحریک کے 30 سال کے بعد ملک کو آزادی مل گئی۔ انہوں نے کہا کہ آج ملک میں جو عدم رواداری اور فرقہ وارانہ تصادم کا ماحول بڑھ رہا ہے، ناٹک کئے جا رہے ہیں اور مادہ پرستی کی چیزیں حاوی ہو رہی ہیں، ایسے وقت میں باپو کے خیالات سے متاثر لوگ سوچ سمجھ کر ملک کے لئے ایجنڈا طے کریں اور راستہ دکھائیں تو یہ ملک اور معاشرے کے لیے اہم کام ہو گا۔

وزیر اعلی نے کہا کہ آج چاروں طرف من گھڑت باتیں کی جارہی ہیں اور یکطرفہ دھونس چل رہا ہے۔ ایسے میں اس قومی مذاکرے میں حصہ لینے والے گاندھی وادی دانشور حضرات ملک میں جو موجودہ صورتحال ہے اس پر تبادلہ خیال کرکے ملک کے لئے ایک ایجنڈا طے کریں، راستہ دکھائیں اور لوگوں پر چھوڑ دیں کہ وہ کون سا راستہ انتخاب کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ گاندھی جی کو صرف نوٹوں میں چھاپ دینے سے کچھ ہونے والا نہیں ہے، آج ضروری ہے کہ ان کے اصولوں، ان کے خیالات کا احترام کریں۔

شراب بندی کے بعد نتیش حکومت اب جہیز کی لعنت اور بچوں کی شادی کے خلاف بھی چلا ئے گی مہم

مسٹرنتیش کمار نے کہا کہ آج جو لوگ مہاتما گاندھی کے خیالات کو نہیں مانتے اور ان کے برعکس چلتے ہیں، وہ بھی چمپارن ستیہ گرہ کا صد سالہ جشن اور مہاتما گاندھی کے 150 ویں یوم پیدائش منائیں گے اور مارچ بھی نکالیں گے۔ انہوں نے کہا کہ گاندھی کے نام میں دم ہے، اس لئے وہ اس کا استعمال کریں گے۔

وزیر اعلی نے کہا کہ ان کی حکومت کا رہنما اصول مہاتما گاندھی کا نظریہ ہی رہا ہے۔ ان کی حکومت نے سماج کو جوڑنے اور معاشرے میں آخری لائن میں کھڑے شخص کو فائدہ ضرور ملے، اس کی کوشش کی ہے۔ ان کی حکومت صرف ترقی کی بات نہیں کرتی ہے بلکہ انصاف کے ساتھ سب کی ترقی میں یقین رکھتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان کی حکومت نے کبھی کسی مخصوص ذات یا مذہب کو ذہن میں رکھ کوئی منصوبہ نہیں بنایا ہے۔ اس لئے اس کی تمام اسکیموں کا فائدہ سب کو ملتا ہے۔

مسٹر نتیش کمار نے کہا کہ ان کی حکومت کی وزیر اعلی سائیکل یوجنا ہو یا وزیر اعلی ڈریس یوجنا، اس کا فائدہ سب کو ملتا ہے۔ایسے ہی بہت سے دوسرے منصوبے ہیں جنہیں وہ شمار کرنے لگیں تو لمبا وقت لگ جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ان کی حکومت مکمل شراب بندی کے بعد اب نشہ سے نجات کی مہم بھی چلا رہی ہے جسے وسیع عوامی حمایت مل رہی ہے۔ حکومت اب دیگر سماجی برائیاں جیسے جہیز اور بچوں کی شادی کے خلاف بھی مہم چلا ئے گي۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز