مولانا نورالرحمان برکتی کے خلاف ٹیپو سلطان مسجد وقف اسٹیٹ کمیٹی کا نوٹس

Feb 08, 2017 12:58 PM IST | Updated on: Feb 08, 2017 12:58 PM IST

کولکاتہ ۔ اپنے متنازعہ بیان کے لئے مشہور اور گزشتہ دنوں نوٹ بندی کو لیکر وزیراعظم نریندر مودی کے خلاف فتوی دینے والے مولانا نورالرحمان برکتی کےخلاف ٹیپو سلطان مسجد وقف اسٹیٹ سامنےآئی ہے۔  وقف اسٹیٹ آف غلام محمّد سن آف شہید ٹیپو سلطان کمیٹی نے نوٹس بھیج کر مولانا سے جواب طلب کیا ہے۔ کمیٹی نے مولانا پر امامت کے پیشے سے ناانصافی برتنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ امامت کے منصب پر رہتے ہوئے انہوں نے سیاسی بیان بازی کراسلامی اقدار کو نقصان پہنچایا ہے۔ وقف کمیٹی نے مولانا سے منصب امامت چھوڑنے کی بھی نصیحت کی ہے۔

 مولانا نے کمیٹی کے نوٹس کو غیر معمولی بتاتے ہوئے تمام الزامات کو غلط بتایا۔ انہوں نے کمیٹی پر آر ایس ایس، بی جے پی اور سی پی ایم کی منشا پر کام کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ وہ مسلمانوں کے مفاد کی باتیں کرتے ہیں اور کرتے رہیں گے ۔ انہوں نےکمیٹی کے خلاف لوگوں کی ناراضگی سامنے آنے کا اندیشہ جتایا۔ واضح رہے کہ مولانا نے گزشتہ دنوں وزیراعظم کے خلاف فتوی دیا تھا۔ تاہم یہ پہلا موقع ہے جب مولانا کے خلاف وقف کمیٹی نے نوٹس بھیجا ہے ۔

مولانا نورالرحمان برکتی کے خلاف ٹیپو سلطان مسجد وقف اسٹیٹ کمیٹی کا نوٹس

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز