پاسپورٹ کے لئے اب نہیں جانا ہو گا 50 کلومیٹر سے دور، حکومت جلد کھولے گی نئے سینٹرز

Jul 15, 2017 08:32 PM IST | Updated on: Jul 15, 2017 08:36 PM IST

کلکتہ ۔  وزیر مملکت برائے امور خارجہ ایم جے اکبر نے آج کہا ہے کہ حکومت ہر 50کلو میٹر کی دوری پر پاسپورٹ آفس کھولنے کے منصوبے پر کام کررہی ہے۔ شمالی کلکتہ کے بیڈون اسٹریٹ کے پوسٹ آفس میں پاسپورٹ سیوا کیندرکا افتتاح کرتے ہوئے مرکزی وزیر نے کہا کہ پاسپورٹ ہرشہری کا حق ہے اور یہ کوئی تحفہ نہیں ہے اور ہم سب جمہوری ہیں اور یہ جمہوری حق ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی اور مرکزی وزیر خارجہ سشما سوراج کا ویژن ہے کہ ہندوستان کے ہر شہری کو پاسپورٹ کی سہولیت فراہم کی جائے اور مستقبل میں ہر پچاس کلومیٹر کی دوری پر پاسپورٹ آفس قائم کیا جائے گا۔

اس موقع پر مرکزی وزیر مملکت ایم جے اکبر ندیا ضلع کے کرشنا نگر میں ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ پاسپورٹ سیوا کیندر کا افتتاح کیا ۔ اکبر نے کہا کہ پہلے لوگوں کو پاسپورٹ آفس کا چکر لگانا پڑتا تھا مگر اب پاسپورٹ آفس کو لوگوں کا انتظار رہے گا ۔ہم لوگ غریب افراد کو بھی اپر کلاس کا سیوا فراہم کرنے میں یقین رکھتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ آسنسول اور رائے گنج میں پہلے سے ہی پاسپورٹ سیوا کیندر قائم ہوچکے ہیں اور اب سلی گوڑی اور دارجلنگ میں بھی اسی طرح کے دفتر قائم کیے جائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ پاسپورٹ دفاتر ایسے ایسے مقامات پر قائم کیے جائیں گے جہاں ماضی میں تصور بھی نہیں کیا جا سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ ڈیڑھ سال قبل اس پر کام شروع کیا گیا اور اب اس میں تیزی آگئی ہے۔ بیڈون اسٹریٹ میں پوسٹ آفس پاسپورٹ سیوا کینڈر سے متعلق ایم جے اکبر نے کہا کہ ماضی میں کوئی یہ سوچ نہیں سکتا تھا کہ یہاں پر پوسٹ آفس کے تعاون پاسپورٹ آفس بھی کھلے گا ۔

پاسپورٹ کے لئے اب نہیں جانا ہو گا 50 کلومیٹر سے دور، حکومت جلد کھولے گی نئے سینٹرز

سابق صحافی ایم جے اکبر نے کہا کہ ماضی میں پاسپورٹ بنانا کافی مشکل کام ہوتا تپا ۔کچھ دفاتر میں ہی سارے اختیارات جمع ہوگئے تھے ۔لوگوں کو پاسپورٹ بنانے میں نہ صرف مشکلات کا سامنا تھا بلکہ خوف زدہ ہوتے تھے ۔ کئی مرتبہ لمبی لمبی لائنوں میں کھڑا ہونا پڑتا ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز