پڑھئے ، کون ہیں پدم شری ایوارڈ یافتہ کریم الحق اور کیوں ہیں بائیک ایمبولینس دادا کے نام سے مشہور

Jan 27, 2017 07:57 PM IST | Updated on: Jan 27, 2017 07:57 PM IST

کلکتہ: یوم جمہوریہ کے موقع حکومت ہند نے ملک کی جن اہم شخصیتوں کی خدمات کے پیش نظر پدم شری ایوارڈ دینے کا اعلان کیا ہے ان میں کئی نام و چہرے مشہور ہیں ان میں ٹیم انڈیا کے کپتان وراٹ کوہلی، پی وی سندھو، پی گوپی چند اور ساکشی ملک جیسے کھلاڑی شامل ہیں، جنہیں ملک کا ہر فرد جانتا ہے ۔مگر اس فہرست کچھ ایسے غیر معروف نام بھی شامل ہیں، جنہیں ملک و عوام کی خاموشی سے خدمات کے عوض یہ شہری ایوارڈ دیا گیا ہے۔ ان میں بنگال کے جلپائی گوڑی ضلع کے رہنے والے کریم الحق کا نام بھی شامل ہے۔

پچاس سالہ کریم الحق جلپائی گوڑی ضلع دھالا باڑی میں ’’بائیک ایمبولینس دادا‘‘ کے نام سے مشہور ہیں ۔چائے باغات والے اس علاقے میں وہ علاج و معالجہ کیلئے وہ گاؤں والوں کیلئے ایک آخری امید ہیں ۔ کئی سال قبل کریم الحق کو اپنی بیمار ماں کے علاج کیلئے گھر گھر جاکر لوگوں سے مدد مانگنی پڑی تھی ۔ایمبولنس نہیں ہونے کی وجہ سے وہ ماں کو اسپتال نہیں پہنچا سکے تھے۔اس کی وجہ سے ماں کا صحیح علاج نہیں ہوسکا اور ان کا انتقال ہوگیا ۔اس واقعہ نے کریم الحق کی سوچ و نظریہ کو تبدیل کردیا اور اسی دن حق نے فیصلہ کیا کہ اب اس علاقے میں کسی بھی شخص کی ایمولنس نہیں ہونے کی وجہ موت نہیں ہوگی۔

پڑھئے ، کون ہیں پدم شری ایوارڈ یافتہ کریم الحق اور کیوں ہیں بائیک ایمبولینس دادا کے نام سے مشہور

کریم الحق کو14سال قبل بائیک کو ایمبولنس کے طور پر استعمال کرنے کا خیال اس وقت آیا جب ا ن کا معاون گرنے کی وجہ سے شدید زخمی ہوگیا۔ایمبولنس وقت پر نہیں مل سکا اسی وقت اس نے موٹر سائیکل پر اپنے معاون کو بیٹھایا اور اس کو اپنے پیٹھ سے باندھ دیا اور پھر جلپائی گوڑی کے صدر اسپتال میں پہنچایا ۔اس کی وجہ سے اس شخص کی جانچ بچ گئی اور وہ صحت یاب ہوگیا اور اس کے بعد ہی کریم الحق نے موٹر سائیکل کو ایمبولنس کے طور پر استعمال کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

کریم الحق یہ خدمات صرف اپنے گاؤں میں ہی نہیں بلکہ دوارس کے دھالا باڑی کے آس پاس 20گاؤں میں یہ خدمات فراہم کرتا ہے۔اس پورے علاقے میں نہ سڑک ہے ، نہ بجلی اور نہ دیگر بنیادی سہولیات ۔اس علاقے کے زیادہ تر لوگ یومیہ مزدور ہیں اور کچھ کھیتی بھی کرتے ہیں ۔یہاں سب سے قریب اسپتال 45کلو میٹر کی دوری پر واقع ہے۔

Karimul haque 2

کریم الحق نہ صرف گاؤں والوں کو بائیک ایمبولنس کی خدمات فراہم کرتا ہے بلکہ اس کے پاس فرسٹ ایڈ بھی ہے جس کے ذریعہ وہ گاؤں والوں کا بنیادی علاج بھی کرتا ہے ۔اس کے علاوہ وہ قبائلی علاقے میں ہیلتھ کیمپ بھی چلاتا ہے  ریم الحق کی بذات خود مہینے کی آمدنی 4000روپے ہے، مگر اس کے باوجود وہ گاؤں والوں کی مدد کرنے سے کبھی بھی پیچھے نہیں ہٹتا ہے اور اس کی نصف تنخواہ اس سروس کو فراہم کرنے میں خرچ ہوجاتی ہے۔اس کی خواہش ہے کہ وہ اس گاؤں میں ایک جدید سہولیات سے لیس ایک ایمبولنس گاڑی مہیا کرائے ۔

کریم الحق کو پدم شری کا ایوارڈ ملنے سے اس پورے علاقے میں خوشی کا ماحول ہے ۔بڑی تعداد میں لوگ آکر ان کو مبارک باد دے رہے ہیں ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز