مہا گٹھ بندھن ٹوٹنے کیلئے نتیش ذمہ دار، مینڈیٹ کی توہین جمہوریت کا گلا گھونٹنےکے مترادف : شرد یادو

Aug 10, 2017 07:35 PM IST | Updated on: Aug 10, 2017 07:35 PM IST

حاجی پور: بہار میں مہاگٹھ بندھن ٹوٹنے کے بعد سے ناراض جنتا دل یونائٹیڈ (جے دی یو) کے سابق قومی صدر شرد یادو نے گٹھ بندھن ٹوٹنے کیلئے وزیر اعلی نتیش کمار کو ذمہ دار قرار دیتے ہوئے کہاکہ عوام کی رائے (مینڈیٹ) کی توہین جمہوریت کا گلا گھونٹنے جیسا ہے۔ مسٹر یادو نے لوک سنواد پروگرام کے پہلے دن آج سارن ضلع کے سونپور اور ویشالی ضلع کے حاجی پور، سرائے سمیت مختلف مقامات پر جلسوں سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ بہار کے عوام نے مہاگٹھ بندھن کو زبردست اکثریت دی تھی۔ انہوں نے مسٹر کمار کو مہاگٹھ بندھن توڑنے کیلئے ذمہ دار قرار دیتے ہوئے کہاکہ آنے والے دنوں میں انہیں اس کا خمیازہ بھگتنا ہوگا۔

جنتا دل یو کے سابق قومی صدر نے کہاکہ بہار کے عوام کے مینڈیٹ کو وزیراعلی مسٹر کمار نے صرف آٹھ گھنٹے میں تہس نہس کردیا اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) سے مل کر حکومت کی تشکیل کرلی۔ اس موقع پر سونپور سے راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے ممبر اسمبلی رامانُج رائے، ویشالی کے ایم ایل سی سبودھ رائے کے علاوہ بڑی تعداد میں لوگ موجود تھے۔

مہا گٹھ بندھن ٹوٹنے کیلئے نتیش ذمہ دار، مینڈیٹ کی توہین جمہوریت کا گلا گھونٹنےکے مترادف : شرد یادو

قبل ازیں پٹنہ کے جے پرکاش نارائن ہوائی اڈہ پہنچنے پر نامہ نگاروں سے بات چیت میں جے ڈی یو کے سابق قومی صدر شرد یادو نے ایک بار پھر پارٹی خطوط سے الگ ہٹ کر کہا کہ آج بھی وہ مهاگٹھ بندھن کے ساتھ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ اسمبلی انتخابات میں دو گٹھ بندھن کا قیام عمل میں آیا تھا اور دونوں نے الگ الگ منشور پر الیکشن لڑا لیکن اس میں سے ایک پارٹی نے اتحادکے برخلاف کام کیا، جو انہوں نے اپنی سیاسی زندگی میں کبھی نہیں دیکھا۔ انہوں نے دعوی کیا کہ مهاگٹھ بندھن آج بھی برقرار ہے۔

جے ڈی یو کے راجیہ سبھا ممبر پارلیمنٹ نے کہا کہ بہار اسمبلی انتخابات میں مهاگٹھ بندھن کو مینڈیٹ ملا تھا۔ بہار کے 11 کروڑ لوگوں نے بڑی امید کے ساتھ مهاگٹھ بندھن کو ووٹ دیا تھا۔ اس طرح سے اتحاد کو توڑنا مناسب نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ اتحاد توڑنا مینڈیٹ کی توہین ہے۔ گزشتہ 40 سال سے وہ سرگرم سیاست میں ہیں اور اسمبلی انتخابات میں وہ خود ڈیڑھ ماہ تک لوگوں کے درمیان تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز