دارجلنگ میں ہڑتال 50 ویں دن میں داخل ، وزیر اعلی ممتا بنرجی کی امن قائم کرنے کی اپیل رائیگاں

گورکھا کوآرڈی نیشن کمیٹی کے علاحدہ ریاست کے مطالبے پر تحریک جاری رکھنے کے اعلان کے بعد آج دارجلنگ ریلوے اسٹیشن کے سامنے کھانے کی اشیاء سے بھری ٹرک کو گورکھا حامیوں نے نقصان پہنچایا ہے۔

Aug 02, 2017 08:59 PM IST | Updated on: Aug 02, 2017 08:59 PM IST

کلکتہ: گورکھا کوآرڈی نیشن کمیٹی کے علاحدہ ریاست کے مطالبے پر تحریک جاری رکھنے کے اعلان کے بعد آج دارجلنگ ریلوے اسٹیشن کے سامنے کھانے کی اشیاء سے بھری ٹرک کو گورکھا حامیوں نے نقصان پہنچایا ہے۔گورکھا حامیوں نے وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی کے امن قائم کرنے کی اپیل کو بھی خارج کردیا ہے ۔ دارجلنگ میں ہڑتال 50ویں دن میں داخل ہوگیا ہے اور اب تک ریاستی و مرکزی حکومت نے اس ہڑتال کو ختم کرنے کیلئے کوئی اشارہ نہیں دیا ہے ۔9جون کووزیر اعلیٰ ممتا بنرجی کے ذریعہ دارجلنگ میں کئی دہائیوں کے بعد کابینہ کی میٹنگ کرنے کے بعد سے ہی دارجلنگ میں حالات خراب ہے۔

گورکھا کوآرڈی نیشن کمیٹی کی چوتھی اور دہلی میں پہلی میٹنگ کل ہوئی جس میں ہڑتال کو جاری رکھنے کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ اگر حالات خراب ہوئے تو مرکزی حکومت کی ذمہ داری ہوگی۔

دارجلنگ میں ہڑتال 50 ویں دن میں داخل ، وزیر اعلی ممتا بنرجی کی امن قائم کرنے کی اپیل رائیگاں

file photo

گورکھا کوآرڈی نیشن کمیٹی میں پہاڑ کی مختلف سیاسی جماعتیں شامل ہیں ۔کمیٹی نے کہا کہ اب مرکزی حکومت کے پالے میں گیند ہے۔وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے ایک طرف جہاں پہاڑ کے عوام کو امن قائم رکھنے کی اپیل کی ہے وہیں دوسری جانب اس بات کا بھی اعادہ کیا ہے کہ مغربی بنگال کی تقسیم نہیں ہوسکتی ہے اور دارجلنگ ریاست کا اٹوٹ حصہ بنارہے گا۔

اس دررمیان گورکھا حامیوں نے سبزیوں ، چاول اور دیگر کھانے کی اشیاء لے جارہے چار ٹرکوں کو نذر آتش کردیا ۔یہ ٹرکیں سلی گوڑی سے آرہی تھی۔دوسری جانب گورکھا خود مختار ایڈ منسٹریشن کونسل (جی ٹی اے) کی مدت آج ختم ہوگئی ہے۔جی ٹی اے پر گورکھا جن مکتی مورچہ کا قبضہ تھا۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز