مرحوم سلطان احمد کے چھوٹے بیٹے شارق احمد کو ترنمول کانگریس الوبیڑیا پارلیمانی حلقہ بناسکتی ہے اپنا امیدوار

Oct 27, 2017 01:45 PM IST | Updated on: Oct 27, 2017 01:52 PM IST

کلکتہ: کلکتہ کی مشہور سیاسی شخصیت سلطان احمد جن کا انتقال گزشتہ مہینے ستمبر میں ہوگیا تھا، کی خالی لوک سبھا حلقہ الوبیڑیا سے ترنمول کانگریس ان کے چھوٹے بیٹے شارق احمد کو امیدوار بناسکتی ہے۔ ممتا بنرجی کے قریبی ذرائع کے مطابق وزیرا علیٰ نے شارق احمد کو امیدوار بنانے کا اشارہ دیدیا ہے ۔چوں کہ ابھی تک ضمنی انتخاب کیلئے تاریخوں کا اعلان نہیں ہوا ہے اس لیے پارٹی نے باضابطہ اعلان نہیں کیا ہے ۔ترنمول کانگریس کے ذرائع کے مطابق وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے شارق احمد کو سلطان احمد کے حلقے انتخاب الوبیڑیا کا دورہ کرنے کی ہدایت دیدی ہے اور الوبیڑیا کے ممبران اسمبلی سے بھی کہا ہے کہ شارق احمد کو عوام سے متعارف کرائیں ۔

شارق احمد نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ وزیراعلیٰ نے مجھ سے کہا ہے کہ میں اپنے والد کے حلقہ انتخاب میں منعقد ہونے والے تعزیتی میٹنگوں میں شرکت کروں ۔اس سوال کے جواب میں ’کیا وہ اپنے والد کی وارثت کو سنبھالنے کیلئے تیار ہیں‘ ؟ ۔شارق احمد نے کہا کہ امیدوار بنانے کا فیصلہ پارٹی کرے گی اور اگر پارٹی مجھے اپنے والدکی وراثت کو آگے بڑھانے کا موقع دیتی ہے تو میں ضرور اس کیلئے تیار ہوں اور والد کے ترقیاتی پروجیکٹوں کو آگے بڑھاؤں گا۔ مغربی بنگال اسمبلی کے ڈپٹی اسپیکر و سابق آئی پی ایس آفیسر حیدر عزیز صفوی جو الوبیڑیا مشرق سے ممبر اسمبلی نے کہا کہ میں نے بھی اس سے متعلق سنا ہے کہ شارق احمد الوبیڑیا ضمنی انتخاب میں پارٹی کے امیدوار ہوسکتے ہیں ۔مگر جب تک وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی خود اس کا اعلان نہیں کردیتی ہیں اس وقت تک کچھ نہیں کہا جاسکتا ہے ۔

مرحوم سلطان احمد کے چھوٹے بیٹے شارق احمد کو ترنمول کانگریس الوبیڑیا پارلیمانی حلقہ بناسکتی ہے اپنا امیدوار

شارق احمد

ترنمول کانگریس کے سینئر لیڈروں کے مطابق شارق احمد کو ٹکٹ ملنے کے زیادہ امکانات ہیں ۔کیوں کہ سلطان احمد اپنے پارلیمانی حلقے میں مقبول تھے۔وہ ہرخاص و عام کی خوشی و غم کے موقعوں پر شریک ہوتے تھے اور انہوں نے اپنے حلقہ انتخاب میں کئی ترقیاتی کام بھی کرائے ہیں ۔اگرشارق احمد کو امیدوار بنایا جاتا ہے تو وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی اور ترنمول کانگریس کے نام پر ووٹ ملنے کے علاوہ ووٹرس ہمدردی میں بھی شارق احمد کو ووٹ دیں گے۔ 26سالہ شارق احمد نے ایم بی اے کی تعلیم مکمل کی ہے۔انہوں نے سینٹ زیویرس کالج سے کامرس سے گریجوٹ کیا ہے ۔سلطان احمد کے دوبیٹے ہیں ایک بیٹا طہ احمد نئی دہلی کے اسپتال میں آرتھو پیٹک سرجن ہیں اور ان کا رجحان سیاست کی طرف نہیں ہے ۔

سلطان احمد کا 4ستمبر کو دل کا دورہ پڑنے کی وجہ سے انتقال ہوگیا تھا ۔ان کی عمر 64سال تھی ۔سلطان احمد کلکتہ کے کئی ملی اداروں کے اداروں کے سربراہ تھے ۔شارق احمد کو بھی ان اداروں کا ممبر بنایاجارہا ہے ۔جب کہ محمڈن اسپورٹنگ کلب کا انہیں گراؤنڈ سیکریٹری بنایا گیا ہے ۔جب کہ سلطان احمد گزشتہ کئی سالوں سے محمڈن اسپورٹنگ کلب کے سربراہ تھے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز