لالو نے ریلوے میں ملازمت دلانے کے عوض میں رابڑی کے نام لکھوائی زمین: سشیل

Jun 20, 2017 05:37 PM IST | Updated on: Jun 20, 2017 05:37 PM IST

پٹنہ۔  بہارکے سابق نائب وزیر اعلی اور بی جے پی لیجس لیچر پارٹی کے لیڈر سشیل کمار مودی نے آج راشٹریہ جنتا دل صدر لالو پرساد یادو اور ان کے خاندان کی مزید دو جائیدادوں کا انکشاف کرتے ہوئے کہا کہ ریلوے میں ملازمت دلانے کے عوض میں محترمہ رابڑی دیوی نے دولوگوں سے اپنے نام زمین لکھوائی ہے۔ مسٹر مودی نے یہاں جنتا دربار میں پروگرام کے بعد نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے الزام لگایا کہ سال 2004 سے 2009 کے درمیان جب مسٹر لالو پرساد یادو ریلوے کے وزیر تھے تب اس دوران انہوں نے ریلوے میں ملازمت دینے کے عوض میں کئی لوگوں سے کافی زمین اپنے خاندان کے نام لکھوائی تھی۔ مسٹر یادو نے نوکری کے نام پر پٹنہ کے سگونا موڑ کے پاس جلال پور اور شیخ پورا میں 35ڈسمل زمین اپنی رابڑی دیوی کے نام کروایا ہے۔انہوں نے بتایا کہ رنجن پتھ شیخ پورا کی زمین کے مالک منوج کمار کے خاندان کے رکن کو مسٹر یادو نے ریلوے میں ملازمت دی ہے۔

بی جے پی لیڈر نے کہا کہ شیخ پورا میں ملی زمین کو سال 2011 میں شریا کنسٹرکشن کمپنی کو اپارٹمنٹ بنانے کے لئے سونپ دیا گیا ۔ اس زمین پر تعمیر 36 فلیٹ میں سے اٹھارہ شریا کنسٹرکشن اور 18محترمہ رابڑی دیوی کے ہیں۔ یہ فلیٹ 18ہزار 652 مربع فٹ پر تعمیر ہوئے ہیں اور ان کی مارکیٹ قیمت بیس کروڑ روپے سے بھی زیادہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ محترمہ رابڑی دیوی کے نام زمین فروخت کرنے کے متعلق دستاویزات میں زمین مالک کے خاندان کو عوامی کوآپریٹیو بینک کے چیک کے ذریعہ ادائیگی دکھائی گئی ہے لیکن حقیقت میں اس چیک کو کھبی کیش نہیں کرایا گیا۔

لالو نے ریلوے میں ملازمت دلانے کے عوض میں رابڑی کے نام لکھوائی زمین: سشیل

سشیل مودی: فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز