لالو کے بیٹے تیج پرتاپ کو چار سال کی عمر میں ہی عطیہ میں ملی تھی 13ایکڑ زمین: سشیل

Jul 04, 2017 05:24 PM IST | Updated on: Jul 04, 2017 05:24 PM IST

پٹنہ۔ بہار بھارتیہ جنتا پارٹی قانون ساز اسمبلی کے لیڈر اور سابق نائب وزیر اعلی سشیل کمار مودی نے راشٹریہ جنتا دل کے صدر لالو پرساد یادو اور ان کے خاندان کے کام کے بدلے زمین معاملے میں ایک اور نیا انکشاف کرتے ہوئے آج کہا کہ لالو رابڑی حکومت میں وزیر رہے برج بہاری پرساد کی بیوی رما دیوی نے مسٹر یادو کے بیٹے تیج پرتاپ یادو کو تقریباً چار سال کی عمر میں ہی تیرہ ایکڑ بارہ ڈسمل زمین عطیہ میں دے دی تھی۔ مسٹر مودی نے یہاں جنتا دربار کے بعد منعقد پریس کانفرنس میں دستاویزی ثبوت دیتے ہوئے کہا کہ لالو رابڑی حکومت میں سائنس اور ٹکنالوجی اورتوانائی کے وزیر رہے برج بہاری پرساد کی بیوی رما دیوی نے23مارچ 1992 کو آر جے ڈی صدر مسٹر یادو کے بڑے بیٹے اور وزیر صحت تیج پرتاپ یادو کو صرف تین سال آٹھ ماہ کی عمر میں ہی تیرہ ایکڑ بارہ ڈسمل زمین عطیہ میں دے دی تھی۔

انہوں نے کہا کہ اسی طرح مسٹر یادو کے وزیر ریل کے دور میں مرکز میں وزیر بننے کے لئے آر جے ڈی کے رگھوناتھ جھا اور کانتی سنگھ نے آر جے ڈی صدر کے خاندان کو کروڑوں روپے قیمت کی جائیداد عطیہ میں دی تھی۔

لالو کے بیٹے تیج پرتاپ کو چار سال کی عمر میں ہی عطیہ میں ملی تھی 13ایکڑ زمین: سشیل

سشیل مودی: فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز