تیجسوی کا سی بی آئی سے سوال: 14 سال کی عمر میں کوئی بچہ غلط کام کس طرح کر سکتا ہے؟

Jul 12, 2017 01:46 PM IST | Updated on: Jul 12, 2017 01:46 PM IST

پٹنہ۔ سی بی آئی چھاپہ کے بعد بہار کی سیاست میں طوفان مچا ہوا ہے۔ اس دوران جے ڈی یو نے میٹنگ کر تیجسوی یادو سے کہا کہ وہ اپنے اوپر لگے بدعنوانی کے الزامات کا جواب دیں۔ بدھ کو تیجسوی نے سی بی آئی چھاپوں پر صفائی دیتے ہوئے سوال پوچھا کہ 14 سال کی عمر میں کوئی بچہ غلط کام کس طرح کر سکتا ہے۔ انہوں نے کہا، جس وقت کے معاملے کو بنیاد بنایا گیا ہے اس وقت ان کی عمر 13-14 سال تھی۔

نائب وزیر اعلی تیجسوی نے کہا، بی جے پی کے لوگ لالو پرساد کے بعد اب 28 سال کے نوجوان سے بھی ڈرنے لگے ہیں۔ بدھ کو کابینہ کے اجلاس سے نکلنے کے بعد تیجسوی نے کہا، یہ صرف بی جے پی، امت شاہ اور وزیر اعظم کی سیاسی سازش ہے۔ تیجسوی نے کہا، میرے کسی بھی محکمہ میں کوئی کرپشن نہیں ہے اور پہلے دن سے ہی ہماری پالیسی رہی ہے کہ کرپشن نہ ہو۔ جس دن میں نے آفس جوائن کیا، اسی دن کہا کہ زیرو ٹالرینس کی پالیسی رہے گی۔ نائب وزیر اعلی کے رہتے آپ میرا کام دیکھیں۔ کوئی انگلی نہیں اٹھا سکتا کہ کوئی غلط کام کیا ہے۔

تیجسوی کا سی بی آئی سے سوال: 14 سال کی عمر میں کوئی بچہ غلط کام کس طرح کر سکتا ہے؟

تیجسوی یادو: فائل فوٹو

انہوں نے کہا، میں نے سب کے لئے کام کیا۔ مذہب ذات دیکھے بغیر کیا کام۔ سڑک تعمیرات کا وزیر رہتے سب سے زیادہ سڑکیں بنوائیں۔ کم عمر میں جو کام کیا وہ مثال ہے۔ ہم نے غریبوں کی بات کی، کسانوں کی بات کی تو سزا دی جا رہی ہے۔ محنت سے ترقی کی بات کی تو سازش رچی جا رہی ہے۔ تیجسوی نے کہا ڈپٹی سی ایم بنا تو کچھ نہیں کیا تو بغیر مونچھیں آئے کیا کروں گا؟

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز