مغربی بنگال کے بشير ہاٹ میں کشیدگی برقرار، وزیر اعلی نے عدالتی جانچ کا حکم دیا

Jul 09, 2017 10:46 AM IST | Updated on: Jul 09, 2017 10:46 AM IST

کولکتہ : مغربی بنگال کے شمالی 24 پرگنہ میں واقع بشيرہاٹ میں پرتشدد واقعات کے بعد اب بھی کشیدگی برقرار ہے ۔ اس پورے معاملہ کی وزیر اعلی ممتا بنرجی نے عدالتی جانچ کا حکم دے دیا ہے ۔ اس کے علاوہ بشيرہاٹ کے ایس پی بھاسکر مکھرجی کو ہٹا دیا گیا ہے ۔ ان کی جگہ سی سدھاکر کو وہاں کا نیا ایس پی بنایا گیا ہے ۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ادھرہفتہ کو ایک مرتبہ پھر بی جے پی لیڈروں کا ایک وفد بشيرہاٹ جانے سے روک دیا گیا تھا ۔ بی جے پی کے ان رہنماؤں کو کولکاتہ میں روک کر حراست میں لے لیا گیا ، لیکن بعد میں انہیں چھوڑ دیا گیا ۔

مغربی بنگال کے بشير ہاٹ میں کشیدگی برقرار، وزیر اعلی نے عدالتی جانچ کا حکم دیا

اس دوران بی جے پی نے گورنر سے مل کر ریاست میں صدر راج لگانے کا مطالبہ کیا ۔ دراصل سوشل میڈیا پر ایک قابل اعتراض پوسٹ ڈالے جانے کے بعد سے یہاں تشدد بھڑک گیا تھا ۔  اس تشدد کا دائرہ جب بڑھا تو حالات کو قابو میں کرنے کے لئے بی ایس ایف کو بلایا گیا ۔ دفعہ 144 نافذ ہونے کے بعد بھی تشدد کی وارداتیں رونما ہوئیں اور مظاہرین نے راستے بند کئے ۔ اس پر پولیس نے آنسو گیس کے گولے بھی چھوڑے ۔ تشدد کے دوران ایک شخص کی موت بھی ہوئی ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز