سیلاب سے برا حال ، شمال مشرق جانے والی تمام ٹرینیں 16 اگست تک منسوخ ، بہار میں اب تک 41 اموات

Aug 14, 2017 08:42 PM IST | Updated on: Aug 14, 2017 08:42 PM IST

نئی دہلی : آسام، مغربی بنگال اور بہار میں سیلاب کی صورتحال کو دیکھتے ہوئے ملک کے دیگر حصوں سے شمال مشرق جانے والی ریلوے خدمات کو بدھ تک کے لئے روک دیا گیا ہے۔ شمال مشرقی فرنٹیئر ریلوے کے اہم افسر تعلقات عامہ پرنب جیوتی شرما نے ایک بیان جاری کر کے کہا کہ 'ریلوے بورڈ نے ملک کے مختلف حصوں سے شمال مشرقی علاقے میں آنے والی تمام ٹرینوں کو منسوخ کر دیا ہے، جنہیں 16 اگست 2017 کی صبح دس بجے تک کٹیہار یا مالدہ شہر پہنچنا تھا۔ ' بتا دیں کہ بہار میں سیلاب سے 41 افراد کی موت ہو چکی ہے۔ اس سے 12 اضلاع کی 65.37 لاکھ آبادی متاثر ہوئی ہے۔

شرما نے بتایا کہ 'مغربی بنگال، بہار، آسام اور شمال مشرق کی ریاستوں میں گزشتہ 72 گھنٹوں میں تیز بارش کی وجہ سے ریلوے خدمات بری طرح متاثر ہوئی ہیں، کیونکہ شمالی فرنٹیئر ریلوے کے کٹیہار اور علی پوردوار سیکٹر کے کئی مقامات میں بارش سے ریل پٹریاں متاثر ہوئی ہیں۔ ' اتوار کو مختلف جگہوں پر پٹریوں پر پانی بھر جانے کی وجہ سے 22 ٹرینوں کو منسوخ کرنا پڑا تھا اور 14 دیگر کو مختلف مقامات پر روکنا پڑا تھا۔

سیلاب سے برا حال ، شمال مشرق جانے والی تمام ٹرینیں 16 اگست تک منسوخ ، بہار میں اب تک 41 اموات

مسلسل ہو رہی بارش کی وجہ سے برہم پتر ندی سمیت دیگر ندیوںمیں طغیانی پر ہیں، جس کی وجہ سے مختلف علاقوں میں پشتے ٹوٹنے کی وجہ نیشنل ہائی وے 37 اور ریلوے روٹ کے سیلاب کی زد میں آ جانے کی وجہ سے بالائی آسام کا نچلی آسام سے مکمل طور پر رابطہ ٹوٹ گیا ہے۔ وہیں گوہاٹی سے ڈبروگڑھ تک فضائی سروس بھی گذشتہ 16 جولائی سے بند ہو گئی ہے۔ اس کی وجہ سے بہت سے لوگوں کو ٹریفک کو لے کر کافی پریشانیاں اٹھانی پڑ رہی ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز