تریپورا گورنر تتھاگت رائے کا روہنگیا مسلمانوں کو لے کر متنازع ٹویٹ ، چوطرفہ تنقید کی زد میں آئے

Sep 11, 2017 05:08 PM IST | Updated on: Sep 11, 2017 05:08 PM IST

اگرتلہ: تریپورا کے گورنر تتھاگت رائے نے ٹوئٹ کرکے روہنگیا مسلمانوں کے ہندوستان میں بازآبادکاری کی مخالفت کی ہے جس سے ایک نیا تناز ع پیدا ہوگیا ہے۔ مسٹر رائے کے ٹوئٹ سے تنازع کافی بڑھ گیا ہے۔ ان کے ٹوئٹ پر مختلف حلقوں سے وابستہ لوگ ان کی سخت نکتہ چینی کررہے ہیں۔ تمام نکتہ چینی کے باوجود مسٹر رائے اپنے موقف پر قائم ہیں ۔ وہ روہنگیامسلمانوں کے معاملے میں گذشتہ چند دنوں سے مسلسل ٹوئٹ کررہے ہیں۔

اس معاملے پر مسٹر رائے نے ٹوئٹ کرکے کہا ’’ بنگلہ دیش یا کوئی بھی مسلم ملک روہنگیا مسلمانوں کو پناہ گزین کے طور پر قبول نہیں کررہا ہے لیکن ہندوستان تو ایک بہت بڑا دھرم شالہ ہے اور اسے روہنگیا مسلمانوں کو قبول کرلینا چاہئے۔ اور اگر آپ نہیں کہتے ہیں تو آپ انسانیت مخالف ہیں۔‘‘ مسٹر رائے نے اس وقت کے مشرقی پاکستان میں ہندووں پر ہوئے مظالم اور قتل عام کا ذکر کرتے ہوئے روہنگیا مسلمانوں کے مسئلے پر ایک کے بعد ایک ٹوئٹ کرنا جاری رکھا۔

تریپورا گورنر تتھاگت رائے کا روہنگیا مسلمانوں کو لے کر متنازع ٹویٹ ، چوطرفہ تنقید کی زد میں آئے

بی جے پی نے گورنر کے اس بیان پر کوئی تبصرہ کرنے سے انکار کردیا ہے۔ جب کہ کانگریس اور مارکسی کمیونسٹ پارٹی نے مسٹر رائے کے ٹوئٹ کی نکتہ چینی کرتے ہوئے ان پر اپنے عہدہ کا غلط استعمال کرنے کا الزام لگایا ہے۔ خیال رہے کہ بائیں بازو کے رہنماوں اور دانشوروں نے روہنگیا مسلمانوں کے ہندوستان میں پناہ دینے کی کھل کر حمایت کی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز