Live Results Assembly Elections 2018

اب مغربی بنگال میں گئو اسمگلنگ کے الزام میں انور حسین اور حفیظ شیخ کا پیٹ پیٹ کر قتل ، علاقہ میں کشیدگی

جلپائی گوڑی ضلع کے برہوریا گاؤں میں میں علی الصبح گایوں کی اسمگلنگ کے شبہ میں بھیڑ نے دو مسلم نوجوانوں کا پیٹ پیٹ کر قتل کردیا

Aug 27, 2017 09:26 PM IST | Updated on: Aug 27, 2017 09:26 PM IST

کولکاتہ: ملک بھر میں گائے کے نام پر بھیڑ کے ذریعہ قتل کا سلسلہ تھمنے کا نام نہیں رہا ہے ۔ اب تازہ معاملہ مغربی بنگال میں پیش آیا ، جہاں جلپائی گوڑی  ضلع کے برہوریا گاؤں میں میں علی الصبح گایوں کی اسمگلنگ کے شبہ میں بھیڑ نے دو مسلم نوجوانوں کا پیٹ پیٹ کر قتل کردیا جبکہ ایک نوجوان کو زخمی کردیا ۔ اس و اقعہ کے بعد پورے علاقے میں بڑی تعداد میں پولیس کو تعینات کردیا گیا ہے ۔

پولیس نے بتایا کہ آج صبح ایک بھیڑ نے گاڑی پر حملہ کردیا اور گاڑی میں سوار 19سالہ انور حسین اور 19سالہ حفیظ الشیخ کو گاڑی سے اتار کر پٹائی کردی جس میں ان دونوں کی موت ہوگئی ۔ اس کے علاوہ گاڑی میں بھی توڑ پھوڑ کی گئی ۔اطلاعات کے مطابق برہوریا گاؤں دھوپ پوری شہر سے 15کلو میٹر کی دوری پر واقعہ ہے اور ہجومی تشدد کا یہ واقعہ 3بجے صبح پیش آیا ہے ۔مرنے والے حفیظ الشیخ آسام کے دھوبری کا رہنے والا ہے جب کہ انور حسین بنگال کے کوچ بہار ضلع کا رہنے والاہے ۔

اب مغربی بنگال میں گئو اسمگلنگ کے الزام میں انور حسین اور حفیظ شیخ کا پیٹ پیٹ کر قتل ، علاقہ میں کشیدگی

اس متنازع نوٹیفکیشن میں مرکزی حکومت نے گائے اور اس کی نسلوں کی فروخت اور خریداری پر براہ راست طور پر روک لگا دی تھی۔

بتایا جارہا ہے کہ یہ نوجوان علی الصبح ایک وین میں جانورلے جارہے تھے کہ صبح گاؤں والوں نے انہیں روک لیا۔ قبل ازیں گاؤں میں جانوروں کی چوری کا ایک واقعہ پیش آچکا تھا ، جس کی وجہ سے وہاں رات میں گشت شروع کردی گئی تھی۔ بھیڑ نے اس گاڑی کا پیچھا کیا اور نوجوانوں کو گاڑی سے باہر لے کر ان کی جم کر پٹائی کی ، جس کے بعد دونوں نوجوانوں کو اسپتال لے جایا گیا ، جہاں ڈاکٹروں نے انہیں مردہ قرار دیا۔ تاہم وین کا ڈرائیور کسی طرح وہاں سے بھاگنے میں کامیاب ہوگیا اور وہ پولیس اسٹیشن جاپہنچا۔

جلپائی گوری ضلع کے سپرنٹنڈنٹ کے مطابق ہم ان لوگوں کی شناخت کرنے کی کوشش کر رہے ہیں ، جو لوگ ان نوجوانوں کے قتل اور مار پیٹ میں ملوث ہیں۔ تاہم اس سلسلہ میں اب تک کوئی گرفتاری نہیں کی گئی ہے۔اس سوال کے جواب میں کہ گاوں والوں میں مشتعل ہوکر ان نوجوانوں کا قتل کیا ہے یا پھر اس کے پیچھے گئو رکشکوں کا ہاتھ ہے ، ایک پولیس افسر نے کہا کہ فی الحال اس کی جانچ کی جارہی ہے۔

Loading...

مغربی بنگال میں گائے کے نام پر ہجومی تشدد کا یہ دوسرا واقعہ ہے ۔اس سے قبل شمالی دیناج پور میں گائے کے نام پر ایک بھیڑ نے ایک نوجوان کو ہلاک کردیا گیا تھا ۔اس وقت مغربی بنگال حکومت نے اس پورے معاملے کو یہ کہہ کر دبانے کی کوشش کی تھی کہ گائے چوری کیے جانے پر بھیڑنے حملہ کردیا ہے۔ پولیس نے بتایا کہ دونوں کی لاش کو پوسٹ مارٹم کیلئے بھج دیا گیا ہے ۔اس معاملے کی جانچ شروع کردی گئی ہے ۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز