بہار کے سبھی ضلعوں میں 1765 عہدوں پر اردو ملازمین کی تقرری کا مطالبہ ، اردو ڈائرکٹوریٹ نے کہا: کارروائی جاری

May 08, 2017 10:25 PM IST | Updated on: May 08, 2017 11:07 PM IST

پٹنہ : بہار میں 1765 اردو ملازمین کی بحالی کی جائےگی۔ اس بات کا اعلان گزشتہ ایک سال پہلے وزیر اعلیٰ نتیش کمار کی جانب سے کیا گیا تھا ، لیکن اس تعلق سے اب تک کوئی کاروائی نہیں ہوسکی ہے۔اردو ڈائریکٹوریٹ اور اردو مشاورتی کمیٹی نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اردو ملازمین کی تقرری جلد عمل میں لائی جائے۔ اردو والے اس معاملہ میں حکومت سے بار بار مطالبہ کرچکے ہیں ، لیکن اردو ملازمین کی بحالی کے تعلق سے اب تک سنجیدہ کوششیں نہیں کی جاسکی ہیں۔ اطلاعات کے مطابق اردو عملہ کی بحالی ہو جائےگی ، تو قانون اردو کے نفاذ کا راستہ بھی آسان ہوجائےگا۔

بہار میں اردو کو دوسری سرکاری زبان کا درجہ حاصل ہے۔ اس اعتبار سے قانون اردو کے نفاذ کے لیے حکومت کے تمام شعبوں میں اردو کے ملازمین کی تقرری کی جانی ہے۔ وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے ریاست کے سبھی دفاتر، محکموں، رجسٹری آفس، تھانوں، کارپوریشنوں، کمیٹیوں اور کمیشن میں اردو عملہ کی بحالی کرنے کا اعلان کیا تھا۔ اردو ڈائرکٹوریٹ کے ڈائرکٹر نے بتایا کی اس سلسلے میں حکومت کارروائی کررہی ہے۔

بہار کے سبھی ضلعوں میں 1765 عہدوں پر اردو ملازمین کی تقرری کا مطالبہ ، اردو ڈائرکٹوریٹ نے کہا: کارروائی جاری

ریاست بھر میں 1765 اردو ملازمین کی بحالی کی جانی ہے۔ اس معاملہ کی فائل محکمہ مالیات میں پڑی ہے۔ اردو ڈائریکٹوریٹ کے مطابق حکومت کی جانب سے پہلے مرحلہ میں 495 عہدوں پربحالی کی جائےگی۔ ادھر اردو مشاورتی کمیٹی بہار نے وزیراعلیٰ کو مشورہ دیا ہے کہ تمام عہدوں پر جلد بحالی کے عمل کو یقینی بنایا جائے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز