ناگالینڈ میں تشدد بھڑکا، مظاہرین نے وزیر اعلی کا گھر کیا نذر آتش، فوج تعینات

Feb 03, 2017 08:55 AM IST | Updated on: Feb 03, 2017 08:55 AM IST

نئی دہلی۔ ناگالینڈ کے دیماپور میں جمعرات کی رات تشدد بھڑک گیا۔ یہاں بلدیاتی انتخابات میں خواتین ریزرویشن کی مخالفت کی چنگاری بھڑک گئی۔ مشتعل لوگوں نے وزیر اعلی ٹی آر جلیانگ کا گھر تک پھونک دیا۔ پرتشدد مظاہروں کو دیکھتے ہوئے ریاست میں انٹرنیٹ سروس روک دی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق علاقے میں فوج کی 5 ٹکڑیاں تعینات کی گئی ہیں۔

دراصل ناگالینڈ میں شہری بلدیاتی انتخابات میں خواتین کو 33 فیصد ریزرویشن دینے کی مخالفت ہو رہی ہے۔ دارالحکومت كوہیما میں بھی یہ احتجاج پرتشدد ہو گیا۔ جمعرات کی شام ہوتے ہوتے حالات اور بگڑ گئے۔ مظاہرین نے کئی سرکاری عمارتوں میں آگ لگا دی۔ حالات بگڑنے پر نیم فوجی فورسز کی تعیناتی کر دی گئی۔ اس درمیان ناگالینڈ کے ڈی جی پی نے کہا ہے کہ دیماپور میں اب حالات کنٹرول میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ كوہیما میں پرتشدد واقعات ہوئے ہیں، لیکن اب پرتشدد مظاہروں پر قابو پا لیا گیا ہے۔

ناگالینڈ میں تشدد بھڑکا، مظاہرین نے وزیر اعلی کا گھر کیا نذر آتش، فوج تعینات

اس سے پہلے ہزاروں لوگوں نے سیکرٹریٹ، میونسپل کونسل اور ضلع کمشنر کے آفس کی طرف مارچ کیا۔ واضح رہے کہ منگل کو پولیس اور مظاہرین کے درمیان تصادم میں دو نوجوانوں کی موت ہو گئی تھی۔ قبائلی تنظیم یہاں خواتین کو انتخابی ریزرویشن دینے کی مخالفت کر رہی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز