آر ایس ایس کی مسلح ریلی پر ممتا بنرجی کے تیور سخت ، عوام کو خوف زدہ کرنے والوں کے خلاف کارروائی ہوگی

وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ہتھیاروں کے ساتھ ریلی نکالنے والوں کے خلاف انتظامیہ سخت کارروائی کرے گی۔ریاست میں ہر شخص برابر ہے اس لیے قانون اپنا کام کرے گا

Apr 06, 2017 11:26 PM IST | Updated on: Apr 06, 2017 11:57 PM IST

کلکتہ : رام نومی کے موقع آر ایس ایس کی طرف سے مسلح ریلیوں کے انعقادپر چیلنج کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے سخت وارننگ دیتے ہوئے کہا کہ عوام کو خوف زدہ کرنے والے سیاسی لیڈروں کے خلاف سخت قانونی کارروائی کی جائے گی ۔ وزیر اعلیٰ نے عوامی ریلی میں تقریر کرتے ہوئے کہاکہ کچھ سیاسی لیڈروں نے ہتھیاروں کے ساتھ ریلی نکالی ہے ۔یہ لوگ عوام کو خوف زدہ کرنے کی کوشش کررہے ہیں ۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ہتھیاروں کے ساتھ ریلی نکالنے والوں کے خلاف انتظامیہ سخت کارروائی کرے گی۔ریاست میں ہر شخص برابر ہے اس لیے قانون اپنا کام کرے گا۔

خیال رہے کہ رام نومی کے موقع پر آر ایس ایس ، وشو ہندو پریشد، ہندو جاگرن منچ نے ریاست بھر میں رام نومی کے موقع پر مسلح ریلی کا انعقاد کیا تھا ۔اس ریلی میں ہزاروں افراد کے علاوہ اسکولی بچے اور بچیوں کے ہاتھوں میں بھی تلوارتھے۔اس ریلی میں بی جے پی کے سینئر لیڈران سمیت ریاستی صدر دلیپ گھوش نے بھی مسلح ریلی کی قیادت کی تھی۔

آر ایس ایس کی مسلح ریلی پر ممتا بنرجی کے تیور سخت ، عوام کو خوف زدہ کرنے والوں کے خلاف کارروائی ہوگی

گیٹی امیجیز

وزیرا علیٰ نے کہا کہ اگر سڑکوں پر اسلحے کے ساتھ مشق کیا جائے گا تو مختلف فرقوں اور برادریوں کے درمیان تنازعات شروع ہوجائیں گے اور ریاست میں امن و امان کا ماحول ختم ہوجائے گا۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ہتھیاروں کے ساتھ رام نومی کی ریلی کی روایات کا بنگال میں کوئی رواج نہیں تھا ۔اگر کل ہوکر کوئی دوسری کمیونیٹی ہتھیاروں کے ساتھ ریلی کااہتمام کرے گی اور اس کے بعد یہ سلسلہ مزید آگے بڑھ جائے گا ۔تاہم بی جے پی نے اس طرح کے مسلح ریلی کا دفاع کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ ہندوستانی کلچر ہے ۔ہندوستان کے آئین کو لکھنے سے قبل بھی یہ روایات رہی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز