ممتا بنرجی کے الزامات بنگال کے عوام کو جذباتی بلیک کرنے کی کوشش کے علاوہ کچھ بھی نہیں : گورنر

Jul 05, 2017 10:51 PM IST | Updated on: Jul 05, 2017 10:51 PM IST

کلکتہ : مغربی بنگال کے وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی کے توہین اور بدسلوکی کے الزامات کو خارج کرتے ہوئے گورنر کیسری ناتھ ترپاٹھی نے آج کہا ہے کہ ممتا بنرجی کے الزامات بے بنیاد ہیں اور یہ صرف بنگال کے عوام کو جذباتی طور پر بلیک میل کرنے کی کوشش کی علاوہ کچھ بھی نہیں ہے ۔

ممتا بنرجی کے الزامات پر سخت تبصرہ کرتے ہوئے ترپاٹھی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ میرے خلاف بیان کرنے کے بجائے وزیرا علیٰ اور ان کے کابینی وزراء ریاست میں لا اینڈ آرڈر کو بحال کرنے پر توجہ دیں ۔انہوں نے کہا کہ حکومت کو ذات اور مذہب کی تفریق کیے بغیر کام کرنے کی ضرورت ہے۔

ممتا بنرجی کے الزامات بنگال کے عوام کو جذباتی بلیک کرنے کی کوشش کے علاوہ کچھ بھی نہیں : گورنر

راج بھون سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ راج بھون ریاستی حکومت کا کوئی محکمہ نہیں ہے ۔یہ ہر ایک شہری کیلئے کھلاہوا ہے اور کوئی بھی ان سے رابطہ کرسکتا ہے ۔یہ الزام سراسر غلط ہے کہ راج بھون بی جے پی یا پھر آر ایس ایس کا دفتر بن گیا ہے ۔

گورنر نے اپنے بیان میں کہا ہے راج بھون صرف ردی کے کاغذات کی نگرانی کیلئے نہیں ہے ۔گورنر یا پھر راج بھون میں کوئی بھی شخص شکایت درج کراسکتا ہے ۔کسی کی کوئی شکایت آتی ہے تو گورنر ہاؤس سے ریاستی حکومت کو پیش کردیا جاتا ہے ۔

ریاستی وزیر پارتھو چٹرجی کے اس بیان پر جس میں انہوں نے کہا تھا کہ گورنر نے اپنے حدیں پار کردی ہیں ۔ترپاٹھی نے کہا کہ یہ سب حکومت بنگال دانستہ طور پر عوام کی توجہ حقیقی مسائل سے دوسری جانب مبذول کرانے کی ہے۔راج بھون سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ گورنر ریاستی وزیر تعلیم کے بیان پر ناراضگی ظاہر کی ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز