مویشیوں کی اسمگلنگ پر پابندی سے بشیرہاٹ میں حالات بگڑے، معاملہ فرقہ وارانہ نہیں: ممتا حکومت

Jul 11, 2017 05:51 PM IST | Updated on: Jul 11, 2017 05:51 PM IST

نئی دہلی۔  بشیر ہاٹ علاقوں میں سنگین صورت حال کے تعلق سے مغربی بنگال کی حکومت نے مرکز کو اپنی تازہ ترین رپورٹ میں کہا ہے کہ مویشیوں کی اسمگلنگ روکنے کی مغربی بنگال پولس کی طرف سے سخت کارروائی اور ہند۔ بنگلہ دیش سرحدی علاقے میں ناجائز شراب کے کاروبار میں سرکاری مداخلت کی وجہ سے یہ حالات پیدا ہوئے ہیں۔ معاملہ فرقہ وارانہ نہیں۔ ذرائع کے مطابق ریاستی وزارت داخلہ نے مرکزی وزارت داخلہ کو جو رپورٹ پیش کی ہے اس میں سرحدی حفاظتی فورس (بی ایس ایف)کی ’’اثر انگیزی‘‘ پر بھی سوال اٹھایا گیا ہے۔

ممتا بنرجی حکومت کی یہ مفصل رپورٹ جو مرکز کو بھیجی گئی ہے اس کےلئے مرکزی وزارت داخلہ نے مطالبہ کیا تھا جس میں کہا گیا تھا کہ بدورائی اور بشیر ہاٹ میں تشدد کی ایک تفصیلی رپورٹ بھیجی جائے۔ تشدد کی شروعات بدورائی سے ہوئی تھی، جو بشیر ہاٹ سب ڈویژن کے دوسرے علاقوں تک پھیل گئی۔ دونوں طرف کی دو فرقہ وارانہ تنظیمیں زیادہ ہی سرگرم ہوگئی تھیں۔

مویشیوں کی اسمگلنگ پر پابندی سے بشیرہاٹ میں حالات بگڑے، معاملہ فرقہ وارانہ نہیں: ممتا حکومت

مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی: فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز