پدم شری ایوارڈ حاصل کرنے والے کریم الحق کو اپنے ضلع میں ہی عزت نہیں مل سکی

Oct 28, 2017 08:35 PM IST | Updated on: Oct 28, 2017 08:39 PM IST

َْٖجلپائی گوڑی۔  مغربی بنگال کے دیہی علاقے میں مفت بائیک ایمبولنس کی سروس فراہم کرنے والے کریم الحق کی ملک بھر میں شہرت ہے اور انہیں حکومت ہند نے اس خدمات کی وجہ سے پدم شری ایوارڈ سے بھی سرفراز کیا تھا۔ مگر یہ سارے ایوارڈ اور خدمات کے باوجود خود انہیں اپنے ضلع میں عزت نہیں مل سکی اور آج اس وقت ذلت کا سامنا کرنا پڑا جب وہ اپنی بیمار بیٹی کو درپیش خون کیلئے بلڈ بینک گئے تو عملہ نے نہ صرف خون دینے سے انکار کردیا بلکہ کریم الحق کے ساتھ بدسلوکی بھی کی گئی ۔ کریم الحق اپنے موبائل کے ذریعہ جلپائی گوڑی میں مفت ایمبولنس سروس فراہم کرتے ہیں ، وہ موٹر سائیکل پر مریض کو بیٹھا کر اسپتال لے جاتے ہیں اور یہ خدمت وہ کئی دہائیوں سے مفت میں فراہم کررہے ہیں۔رپورٹ کے مطابق کریم الحق کی بیٹی بچے کی پیدائش کے بعد سخت بیمار ہوگئی تھیں اور بہت ہی زیادہ خون بہہ جانے کی وجہ سے انہیں فوری خون چڑھانے کی ضرورت تھی ۔ اس لیے کریم الحق بلڈ بینک گئے مگر بینک اسٹاف نے نہ صرف خون دینے سے انکار کردیا بلکہ عملہ نے ان کے ساتھ بدسلوکی بھی کی ۔

اس واقعہ پر تبصرہ کرتے ہوئے کریم الحق نے کہا کہ انہوں نے بلڈ بینک عملہ سے اپنا تعارف بھی کرایا تھا مگر صدر اسپتال کے عملے نے ان کی بات نہیں سنی بلکہ بدسلوکی بھی کی ۔ میں بیٹی کو خون چڑھائے بغیر گھر لے کر آگیا ہوں ،اس واقعہ سے میں اپنی بے عزتی محسوس کررہا ہوں ۔ بلڈ بینک عملہ کے خلاف میں محکمہ صحت میں شکایت کروں گا ۔

پدم شری ایوارڈ حاصل کرنے والے کریم الحق کو اپنے ضلع میں ہی عزت نہیں مل سکی

مفت بائیک ایمبولنس کی سروس فراہم کرنے والے کریم الحق: فائل فوٹو۔

ضلع صحت آفیسر جگن ناتھ سرکار نے کہا کہ یہ واقعہ افسوس ناک ہے ۔کریم الحق کے ساتھ بدسلوکی کرنے والے اسٹاف کے خلاف کارروائی ہوگی اور اس کی جانچ جاری ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز