چدمبرم ایئر سیل- میکسس گھوٹالہ کے معاملے میں انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کے سامنےہوئے پیش

کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق وزیر خزانہ پی چدمبرم 3500 کروڑ روپے کے ایئر سیل- میکسس گھوٹالہ کے معاملے میں آج انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ(ای ڈی) کے سامنے پیش ہوئے۔

Jun 12, 2018 10:46 PM IST | Updated on: Jun 12, 2018 10:46 PM IST

نئی دہلی: کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق وزیر خزانہ پی چدمبرم 3500 کروڑ روپے کے ایئر سیل- میکسس گھوٹالہ کے معاملے میں آج انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ(ای ڈی) کے سامنے پیش ہوئے۔ ای ڈی نے مسٹر چدمبرم سے ان کے بیٹے كارتی چدمبرم کے خلاف سال 2017 میں درج حوالہ کیس میں پوچھ گچھ کی۔ کانگریسی لیڈر اس سے پہلے گزشتہ چھ جون کو ای ڈی کے سامنے پیش ہوئے تھے اور اس دن بھی ان سے کئی گھنٹے تک پوچھ گچھ کی گئی تھی۔

دہلی کی ایک عدالت نے 10 جولائی تک ان کی گرفتاری پر روک لگاتے ہوئے انہیں جانچ ایجنسی کے ساتھ تعاون کرنے کے لئے کہا تھا۔ مرکزی تفتیشی بیورو ( سی بی آئی) اور ای ڈی ایئر سیل- میکسس سودے کو غیر ملکی سرمایہ کاری کے فروغ بورڈ کی طرف سے سال 2006 میں دی گئی منظوری میں كارتی چدمبرم کے مبینہ کردار کی تحقیقات کر رہی ہے۔ اس وقت مسٹر پی چدمبرم وزیر خزانہ تھے اور یہ بورڈ بھی وزارت خزانہ کے ماتحت کام کرتا ہے۔ ای ڈی اس معاملے میں كارتی چدمبرم کی 1.16 کروڑ روپے کی جائیداد بھی ضبط کر چکی ہے۔

چدمبرم ایئر سیل- میکسس گھوٹالہ کے معاملے میں انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کے سامنےہوئے پیش

کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق مرکزی وزیر پی چدمبرم: فائل فوٹو۔

 

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز