ٹرمپ کو پھربڑا دھچکا ، سفر سے متعلق ہدایت پر ہوائی کی عدالت نے لگائی روک

Mar 16, 2017 09:55 AM IST | Updated on: Mar 16, 2017 09:55 AM IST

نیویارک : امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کو اس وقت ایک اور بڑا دھچکا لگا جب ہوائی کی ایک عدالت نے چھ مسلم ممالک کے شہریوں کے امریکہ کے دورہ سے متعلق ان کی ہدایت پر پھرپابندی لگا دی۔  مسٹر ٹرمپ نے چھ مارچ کو ہی سفر سے متعلق نئے حکم پر دستخط کئے تھے جس میں دنیا کے چھ مسلم ممالک کے شہریوں کے امریکہ آنے پر روک لگانے کی بات کہی گئی تھی لیکن ہوائی کے ایک وفاقی جج نے اس ہدایت کے نافذ ہونے سے کچھ گھنٹے پہلے پھر اس پر روک لگا دی ہے۔

ہوائی کے وفاقی جج ڈیری واٹسن نے نئی ہدایت پر روک لگاتے ہوئے کہا کہ اس ہدایت سے امریکی آئین کی مسلمانوں کے خلاف امتیازی سلوک اور ان کی حفاظت کے قوانین کی خلاف ورزی ہوگی۔  صدر اور عدالت کے درمیان جاری یہ جنگ اب فیڈرل کورٹ جا سکتی ہے۔ صدر ٹرمپ نے اس سے پہلے اس سال جنوری میں بھی سفر سے متعلق اسی طرح کی ہدایت جاری کی تھی جس پر سیئٹل کے ایک جج نے روک لگا دی تھی۔

ٹرمپ کو پھربڑا دھچکا ، سفر سے متعلق ہدایت پر ہوائی کی عدالت نے لگائی روک

رائٹرز

صدر ٹرمپ مسلمانوں کی اکثریت آبادی والے چھ ممالک کے شہریوں کے امریکہ آنے پر 90 دن کی پابندی لگانا چاہتے ہیں۔ اس کے علاوہ وہ پناہ گزینوں پر بھی 120 دن کے لئے پابندی لگانا چاہتے ہیں۔ صدر کا کہنا ہے کہ ان پابندیوں سے دہشت گردوں کو امریکہ میں گھسنے سے روکا جا سکے گا لیکن ہدایت پر روک لگانے والے فریقین کا خیال ہے کہ اس سے تفریق کو فروغ ملے گا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز