میانمار میں ترکی کے دو صحافیوں سمیت چار کو حراست میں لیا گیا

Oct 28, 2017 03:31 PM IST | Updated on: Oct 28, 2017 03:31 PM IST

نوپتائے / ینگون۔  میانمار کی پولیس نے ترکی کے سرکاری ٹیلی ویژن چینل ٹي اے ٹي کے دو صحافیوں سمیت چار لوگوں کو آج حراست میں لے لیا۔ ایک مقامی اہلکار نے بتایا کہ میانمار کی پارلیمنٹ کےکیمپس کے قریب ڈرون اڑانے کے الزام میں ٹي اے ٹی چینل کے دو صحافیوں اور ان کے ساتھ موجود ایک مترجم اور ڈرائیور کو گرفتار کیا گیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ دو صحافیوں سنگاپورکے لاؤہانگ میگ اور ملیشیا کے موک چوئی لین سے راجدھانی کی ایک پولیس اسٹیشن میں پوچھ گچھ کے بعدحراست لے لیا گیا ۔ایک پولیس افسر شوے تھانگ نے چار افراد کو حراست میں لینے کی تصدیق کی ہے لیکن اس معاملے میں تفصیلات نہیں بتائیں۔ انہوں نے کہا کہ پولیس معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے تو اب زیادہ کچھ کہا نہیں جا سکتا ہے۔

میانمار میں ترکی کے دو صحافیوں سمیت چار کو حراست میں لیا گیا

علامتی تصویر

قابل غورہے کہ روہنگیا کے خلاف 25 اگست سے شروع ہو نے والے تشدد کے بعد اب تک چھ لاکھ سے زیادہ لوگ اپنی جان بچا کر بنگلہ دیش پہنچ چکے ہیں۔ روہنگیا بحران کو لے کر ترکی اور میانمار کے درمیان کشیدگی میں اضافہ ہوا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز